1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

قطر نے افریقہ سے اپنے فوجی واپس بلا لیے

قطر نے افریقی ممالک جبوتی اور اریٹریا کی سرحد سے اپنے تمام فوجی واپس بلا لیے ہیں۔ قطر کی طرف سے یہ اقدام ایک ایسے وقت پر سامنے آیا ہے جب قطر کی ہمسایہ خلیجی ریاستوں نے اس کی ناکہ بندی کر رکھی ہے اور خطے میں تناؤ ہے۔

براعظم افریقہ کے مشرقی حصے کی دو ہمسایہ ریاستیں جبوتی اور اریٹریا کے درمیان طویل عرصے سے سرحدی تنازعہ موجود ہے اور قطر مصالحت کے لیے ان کی مدد کر رہا ہے۔ دوحہ حکومت نے 2010ء سے اس تنازعے کے حل کے لیے وہاں اپنے فوجی تعینات کر رکھے ہیں۔

قطر کی حکومت کی طرف سے اس فیصلے کی کوئی وجہ نہیں بتائی گئی۔ سعودی عرب، بحرین، متحدہ عرب امارات اور مصر کے علاوہ کئی دیگر ریاستوں نے بھی قطر سے سفارتی تعلقات منقطع کر رکھے ہیں۔ قطر کی ہمسایہ خلیجی ریاستوں نے قطر کی مکمل ناکہ بندی بھی کر رکھی ہے اور اس کے ساتھ تمام زمینی، سمندری اور فضائی رابطے کاٹ دیے ہیں۔

قطر کی ناکہ بندی اور سفارتی تعلقات منقطع کرنے کے باوجود فی الحال یہ معاملہ اس حد تک نہیں پھیلا کہ کسی فوجی تنازعے کی شکل اختیار کر لے۔ تاہم قطر کی فوج ہمسایہ ریاستوں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے مقابلے میں انتہائی چھوٹی ہے۔

Katar | Militärparade in Katar (picture-alliance/Photoshot)

قطر کی فوج ہمسایہ ریاستوں سعودی عرب اور متحدہ عرب امارات کے مقابلے میں انتہائی چھوٹی ہے

اریٹریا کے سب سے بڑے مسلح گروپ ’ریڈ سی افار ڈیموکریٹک آرگنائزیشن‘ کے ایک ترجمان نصرالدین علی کے مطابق قطر کے 450 فوجی اریٹریا اور جبوتی کے درمیان پہاڑی سرحدی کراسنگ کو کنٹرول کرتے تھے۔ علی کے مطابق قطری فوجیوں کی واپسی کے بعد وہاں اریٹریا کے فوجی بھیج دیے گئے ہیں۔

افریقی یونین میں اریٹریا کے سفارت کار ارایا دیستا نے خبر رساں ادارے ایسوسی ایٹڈ پریس کو بتایا کہ یہ پیشرفت اریٹریا کی طرف سے قطر کے ساتھ سفارتی تعلقات منقطع کرنے کے فیصلے کے بعد سامنے آئی ہے۔ تاہم ان کا کہنا تھا کہ اریٹریا جبوتی کے ساتھ کسی قسم کا کوئی تنازعہ نہیں چاہتا۔

سعودی عرب، مصر، متحدہ عرب امارات اور بحرین کی طرف سے دوحہ حکومت پر الزامات عائد کیے گئے تھے کہ وہ دہشت گردی کی حمایت کر رہی ہے تاہم قطر ان الزامات کی تردید کرتا ہے۔ قطر کی ناکہ بندی کے باعث اس خلیجی ریاست میں کھانے پینے کی اشیاء کی قلت کا خدشہ ہے تاہم ایران سمیت کئی ممالک نے ضروری ساز و سامان قطر روانہ کیا ہے۔ اس کے علاوہ دوحہ نے عمان کی دو بندرگاہوں سے بھی سمندری راستے سے یہ اشیاء منگائی ہیں۔

ویڈیو دیکھیے 00:59

قطر کی سپر مارکیٹوں میں شہریوں کا رش

Audios and videos on the topic