1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’قبل از وقت عام انتخابات‘، یونانی وزیراعظم کا اشارہ

یونانی وزیراعظم نے اشارہ دیا ہے کہ اگلے ہفتے ہونے والے بلدیاتی انتخابات میں اگران کی جماعت کی کارکردگی بری رہی، تو وہ قبل از وقت عام انتخابات کے انعقاد کا اعلان کر سکتے ہیں۔

default

ہفتے کے روز اپنے ایک بیان میں یونانی وزیراعظم جارج پاپاندریو نے کہا کہ بلدیاتی انتخابات میں خراب کارکردگی کا مطلب یونانی عوام کا ان کی جماعت پر عدم اعتماد تصور کیا جائے گا، اور ایسی صورتحال میں عام انتخابات کا اعلان کیا جا سکتا ہے۔ تاہم پاپاندریو نے یہ واضح نہیں کیا کہ ان کی نظر میں خراب نتائج سے مراد کیا ہے اور وہ کس صورت میں وہ نئے انتخابات کا اعلان کر سکتے ہیں۔

Streik Lastwagenfahrer in Griechenland

یونان میں حکومت مخالف مظاہروں میں شریک ایک شخص

ملک میں مالیاتی بحران اور بجٹ خسارے کے بعد یورپی یونین اور یورو زون کی طرف سے شدید ترین دباؤ پر ملک میں سخت مالیاتی ضابطوں اور بجٹ اصلاحات کا نفاذ کرنے والی حکمران جماعت سوشلسٹ پارٹی کو عوامی سطح پر تنقید کا سامنا ہے۔ عوامی جائزوں میں اس جماعت کی مقبولیت میں نمایاں کمی دیکھی گئی ہے۔ سات نومبر کو ملک میں بلدیاتی انتخابات کو اس جماعت کے لئے ایک اہم امتحان سے تعبیر کیا جا رہا ہے۔ جارج پاپاندریو نے ایک مرتبہ پھر یونانی عوام سے اپیل کی کہ یورو کرنسی کے استحکام کے لئے حکومتی کوششوں کا ساتھ دیا جائے۔

’’اگر سفر کے آغاز ہی میں ہمیں شکوک و شبہات آن لیں۔ اگر یہ دکھائی دے کہ ہمیں بیچ راہ میں تنہا چھوڑ دیا گیا ہے اور ملک کو عدم استحکام کی طرف بڑھایا جا رہا ہے، تو ظاہر ہے ملک کے اعتماد کو ٹھیس پہنچے گی۔‘‘

جارج پاپاندریو نے یہ بیان ریل نیوز نامی اخبار کو اتوار کی اشاعت کے لئے دیا، ’’ایسے حالات میں کوئی اور حل نہیں بچتا، سوائے اس کے کہ یونانی عوام سے بات کی جائے۔ ملک کو غیر مستحکم کرنے والی قوتوں کی پالیسیوں کا مقابلہ عوامی قوت سے کیا جائے اور ملک کے مستقبل کا فیصلہ کیا جائے۔‘‘

Griechenland Demonstration in Athen vor Finanzministerium

مالیاتی اصلاحات پر حکومت کو شدید مخالفت کا سامنا ہے

جارج پاپاندریو کے اس بیان کو ان کی طرف سے ممکنہ طور پر نئے انتخابات کے لئے ایک نئے اشارہ قرار دیا جا رہا ہے۔ اس سے قبل ایک مقامی ٹی وی چینل کو 25 اکتوبر کو دیے گئے ایک انٹرویو میں جارج پاپاندریو نے کہا تھا کہ وہ نئے عام انتخابات کے لئے تیار ہیں۔

عام انتخابات کے حوالے سے ایسی خبریں منظر عام پر آنے سے ملکی مالیاتی منڈیوں میں خاصی بے چینی دیکھی جا رہی ہے۔ پہلے ہی مالیاتی بحران کی شکار یونانی معیشت میں ممکنہ طور پر نئے انتخابات کو حکومت کی جانب سے اب تک کئے گئے اقدامات کو سبوتاژ کرنے کے مترادف قرار دیا جا رہا ہے۔

جارج پاپاندریو نے اس صورتحال کی وضاحت ان الفاظ میں کی، ’’میں مذاق نہیں کر رہا۔ ہمیں جو بحران درپیش ہے، وہ مذاق نہیں ہے۔ مجھے ملک کے لئے ایک شدید خطرہ نظر آ رہا ہے۔ اگر ہم نے ملک میں سیاسی محاذ آرائی پیدا کی، تو مجھے خوف ہے کہ ہماری اب تک کی قربانیاں رائیگاں چلی جائیں گی۔‘‘

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : افسر اعوان

DW.COM

ویب لنکس