1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

فیصل شہزاد پر باضابطہ فردجرم عائد

پاکستانی نژاد امریکی شہری فیصل شہزاد پر بڑے پیمانے پر تباہی پھیلانے والے ہتھیار استعمال کرنے کی کوشش اور دہشت گردی کے الزمات کے تحت باضابطہ طور پرفردجرم عائد کردی گئی ہے۔

default

شہزاد پرالزام عائد کیا گیا ہے کہ اس نے گزشتہ ماہ نیویارک کے ٹائمز سکوائر کے مقام پرایک کار بم دھماکہ کرنے کی کوشش کی تھی۔

فیصل شہزاد، تین مئی کو جے ایف کے ایئر پورٹ سے اس وقت حراست میں لیا گیا تھا، جب وہ مبینہ طور پر دبئی فرار ہونے کی کوشش کررہا تھا۔ جمعرات کو امریکہ کی ایک وفاقی جیوری نے فیصل شہزاد پر کل دس الزامات کے تحت فرد جرم عائد کی۔ جیوری کے مطابق شہزاد کا تعلق پاکستانی طالبان سے ہےاوراس نے پاکستانی قبائلی علاقے وزیرستان میں بم بنانے کی تربیت حاصل کی۔

Eric Holder Bildergalerie Kabinett

امریکی اٹارنی جنرل ایرک ہولڈر

امریکی اٹارنی جنرل ایرک ہولڈر نے کہا: ’’فرد جرم کے مطابق پاکستانی طالبان نے فیصل شہزاد کی مدد کی تاکہ وہ امریکہ پر حملہ کر سکے۔‘‘ انہوں نے کہا کہ اس قسم کی کوششوں سے معلوم ہوتا ہے کہ امریکی عوام کو دہشت گردی کا مسلسل خطرہ ہے اوراس خطرے کو ختم کرنے کے لئے واشنگٹن حکومت ہر ممکن وسیلہ بروئے کارلائے گی۔

اگر فیصل شہزاد پریہ الزامات ثابت ہو جاتے ہیں تو اسے عمر قید کی سزا سنائی جا سکتی ہے۔ شہزاد اپنی گرفتاری کے بعد مبینہ طور پر یہ اعتراف کرچکا ہے کہ اس نے پاکستانی قبائلی علاقے وزیرستان میں بم بنانے کی تربیت حاصل کرکے ٹائمز سکوائر میں کار بم دھماکے کی کوشش کی تھی۔

امریکی دفتراستغاثہ کا کہنا ہے کہ تیس سالہ فیصل شہزاد ان کے ساتھ بھرپور تعاون کر رہا ہے۔

رپورٹ :عاطف بلوچ

ادارت : شادی خان سیف

DW.COM