1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

فٹ بال کمنٹری نے پاگل نہیں ہونے دیا، شہباز تاثیر

پنجاب کے سابق گورنر مرحوم سلمان تاثیر کے صاحبزادے شہباز تاثیر کو ابھی حال ہی میں شدت پسندوں سے رہائی ملی ہے۔ شہباز تاثیر کو برطانوی فٹ بال کلب مانچسٹر یونائیٹڈ کی جانب سے ایک تحفہ موصول ہوا ہے۔ لیکن کیوں؟

شہباز تاثیر نے شدت پسندوں سے رہائی کے بعد ایک انٹرویو میں کہا تھا کہ قید کے دوران وہ مانچسٹر یونائیٹڈ کے میچوں کی کمنٹری ریڈیو پر سنتے تھے اور اس کمنٹری کی بدولت ہی وہ اپنے ہوش و ہواس میں رہے۔

شہباز تاثیر کو 2011ء میں مسلح افراد لاہور سے اغوا کر کے لے گئے تھے اور رواں برس مارچ میں وہ اپنے گھر والوں سے دوبارہ ملے ہیں۔ ابھی حال ہی میں انہوں نے ایک انٹرویو میں ان پانچ سالوں کے دوران ڈھائے جانے والے مظالم کی داستان بیان کی۔

اس دوران انہوں افشا کیا کہ ان کی نگرانی پر مامور ایک محافظ کی مہربانی سے وہ مانچسٹر یونائیٹڈ کے تمام فٹ بالوں میچوں کی روداد سن پاتے تھے۔ یہ محافظ اپنا ریڈیو قید خانے میں لے آتا تھا اور وہ خود بھی اسی برطانوی فٹ بال کلب کا مداح تھا۔

شہباز کے بقول، ’’میرے لیے یہ بیرونی دنیا سے رابطے کا واحد ذریعہ تھا۔ فٹ بال کی خبروں نے مجھے پاگل نہیں ہونے دیا۔‘‘

ہفتے کے روز انہوں نے اپنی ایک تصویر ٹویٹ کی ہے، جس میں وہ مانچسٹر یونائیٹڈ کی سرخ ٹی شرٹ پہنے ہوئی ہے اور ان کے چہرے پر خوشی واضح طور پر دیکھی جا سکتی ہے۔ اس تصویر کے نیچے تحریر ہے ’’ او خدایا ، مانچسٹر یونائیٹڈ نے مجھے یہ بھیجی ہے، میں حیران ہوں۔ شکریہ دوستو(کھلاڑیوں)۔‘‘

شہباز تاثیر کی رہائی کے حوالے سے معاملات ابھی تک غیر واضح ہیں۔ انہوں نے بی بی سی اور سی این این کو بتایا تھا کہ تحریک ازبکستان انہیں قیدیوں کے تبادلے کے لیے استعمال کرنا چاہتی تھی۔ تاہم انہوں نے یہ بھی کہا کہ طالبان کے پاس آنے کے بعد طالبان کے ایک سینیئر کمانڈر نے انہیں آزاد کرانے میں ان کی مدد کی لیکن انہوں نے مدد کی وجہ نہیں بتائی۔