1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

فٹبال کے شعبے میں جرمنی سے پانچ سالہ تعاون پر چینی حکومت خوش

چین اور جرمنی کے درمیان فٹ بال کے شعبے میں تعاون کے پانچ سالہ معاہدے پر عمل درآمد کا آغاز ہو گیا ہے۔ جرمنی کا دورہ کرنے والے چینی نائب وزیر اعظم لِیُو یان ڈونگ کے مطابق چین جرمنی سے کئی حوالوں سے بہت کچھ سیکھ سکتا ہے۔

FC Bayern München in China (picture alliance/ZUMA Press)

چین میں بنڈس لیگا کی صرف ایک ٹیم بائرن میونخ کے شائقین کی تعداد بھی لاکھوں میں بنتی ہے

جرمن شہر کولون سے ہفتہ چھبیس نومبر کو ملنے والی ملکی نیوز ایجنسی ڈی پی اے کی رپورٹوں کے مطابق ان دنوں جرمنی کا دورہ کرنے والی چینی خاتون نائب وزیر اعظم لِیُو یان ڈونگ نے عالمی چیمپیئن جرمنی کے ساتھ فٹ بال کے شعبے میں تعاون پر خوشی اور اطمینان کا اظہار کیا ہے۔

چینی نائب وزیر اعظم نے ہفتے کے روز کولون میں جرمن فٹ بال فیڈریشن (DFB)، جرمن فٹ بال لیگ (DFL) اور چینی فٹ بال ایسوسی ایشن (CFA) کے اعلیٰ ترین عہدیداروں کے ایک مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ بہت خوش ہیں کہ فٹ بال کے شعبے میں دوطرفہ تعاون کے معاہدے کے تحت چین متعدد مرتبہ ورلڈ چیمپیئن بننے والے جرمنی سے کئی حوالوں سے بہت کچھ سیکھ سکتا ہے۔

اپنے خطاب میں یان ڈونگ نے کہا، ’’فٹ بال ہمارے دونوں ملکوں کے مابین ایک ایسی مشترکہ زبان ہے، جو ایک نئے پل کا کام دے گی۔‘‘ ہفتے کے روز اسی اجلاس کے موقع پر جرمنی میں فٹ بال کی فیڈرل لیگ یا بنڈس لیگا کھیلنے والی کولون کی ٹیم کی طرف سے یہ اعلان بھی کیا گیا کہ وہ جلد ہی چین کا ایک دورہ کرے گی، جہاں وہ لِیاؤنِنگ کی ٹیم کے ساتھ ایک دوستانہ میچ کھیلے گی۔ اس میچ کی تاریخ ابھی طے نہیں ہوئی۔

جرمن نیوز ایجنسی ڈی پی اے نے لکھا ہے کہ دنیا میں سب سے زیادہ آبادی والا ملک چین اس وقت فٹ بال کی دنیا میں اپنا مقام بہتر بنانے کی کوشش میں ہے جبکہ چین کے ساتھ فٹ بال کے شعبے میں تعاون کے پانچ سالہ معاہدے پر عمل درآمد شروع ہو جانے کے بعد بنڈس لیگا یا فیڈرل جرمن فٹ بال لیگ کو چین کی مالی اعتبار سے انتہائی پرکشش مارکیٹ تک رسائی بھی حاصل ہو سکے گی۔

Deutschland Hamburg Summit: China meets Europe (picture-alliance/dpa/D. Reinhardt)

چینی نائب وزیر اعظم کی جرمنی کی شہری ریاست ہیمبرگ کے وزیر اعلٰی کے ساتھ ملاقات کے موقع پر لی گئی ایک تصویر

Berlin Kooperationsvereinbarung Fußball (picture-alliance/dpa/R. Jensen)

ڈی ایف بی اور ڈی ایف ایل کے اعلیٰ اہلکار چین کے ساتھ فٹ بال کے شعبے میں تعاون کے پانچ سالہ معاہدے پر دستخط کرتے ہوئے

اس موقع پر جرمن فٹ بال لیگ کے چیف ایگزیکٹو کرسٹیان زائفرٹ نے کہا، ’’جرمن فٹ بال فیڈریشن اور جرمن فٹ بال لیگ کو امید ہے کہ دو طرفہ معاہدے کے بعد جرمن فٹ بال کے چین میں موجود شائقین کی تعداد میں مزید اضافہ ہو سکے گا۔‘‘

چینی اور جرمن حکومتوں کے مابین فٹ بال کے شعبے میں اس پانچ سالہ معاہدے پر دستخط کل پچیس نومبر جمعے کے روز برلن میں اس وقت کیے گئے تھے، جب چینی خاتون نائب وزیر اعظم لِیُو یان ڈونگ نے جرمن چانسلر انگیلا میرکل سے ملاقات کی تھی۔

جرمنی میں ریکارڈ مرتبہ بنڈس لیگا چیمپیئن شپ جیتنے والی ٹیم بائرن میونخ چینی منڈی تک رسائی کے لیے پہلے ہی کئی اقدامات کر چکی ہے تاہم اب دوطرفہ معاہدے کے بعد دیگر جرمن فٹ بال ٹیمیں بھی چینی منڈی میں اپنے لیے جگہ بنا سکیں گی۔

DW.COM