1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

فرانسیسی وزیر خارجہ لیبیا میں، امن ڈیل کو وسعت دینے کا امکان

فرانس کے وزیر خارجہ ژاں ایو لیدریاں لیبیا کے مختلف سیاسی حریفوں سے ملاقاتوں کے لیے طرابلس پہنچ گئے ہیں۔ وہ لیبیا میں قیام کے دوران پیرس امن ڈیل کے لیے مختلف اہم عسکری دھڑوں کی حمایت حاصل کرنا چاہتے ہیں۔

Bildkombo Fayiz as-Sarradsch und Khalifa Haftar (imago/Xinhua)

لیبیا کی یونٹی حکومت کے وزیراعظم فائز السراج (بائیں) اور خلیفہ حفتر

فرانس کے صدر ایمانوئل ماکروں اس کوشش میں ہیں کہ لیبیا میں امن بحال کر کے یورپ کو افریقی مہاجرین کے سیلاب سے بچایا جا سکے۔ پیرس امن ڈیل انہی کی کوششوں سے طے پائی تھی۔ اس ڈیل کو طے کرتے وقت کئی اہم سیاسی عسکری گروپوں کو نظرانداز کر دیا گیا تھا لیکن اب انہیں بھی اس میں شریک کرنے کی کوشش شروع کر دی گئی ہے۔ اس مقصد کے لیے وزیر خارجہ لیدریاں کو روانہ کیا گیا ہے۔

لیبیا: فوجی چھاؤنی پر حملے میں 141 ہلاکتیں

انسانی اسمگلنگ کے خلاف لیبیا اور یورپ متحرک

یورپی سمٹ کا اہم ترین موضوع، لیبیا کے مہاجرین کو روکنا

ليبيا ميں ہزاروں غير قانونی مہاجرين قيد

طرابلس پہنچ کر لیدریاں نے کہا کہ اس دورے کا مقصد لیبیا میں امن کا قیام ہے اور یہ یقینی طور پر لیبیائی عوام کے حق میں بھی ہے۔ لیدریاں نے یہ بھی کہا کہ ایک متحدہ لیبیا اور اُس کے فعال ادارے یقینی طور پر اس خطے کو دہشت گردوں سے طویل عرصے تک نجات دلانے میں اہم ہیں۔

Frankreich Macron nimmt Friedensgespräche für Libyen auf (Reuters/P. Wojazer)

فرانسیسی صدر ماکروں، وزیر خارجہ لیدریاں، فائزالسراج اور خلیفہ حفتر پیرس امن ڈیل کی میٹنگ میں

انہوں نے طرابلس پہنچ کر ملاقاتوں کا سلسلہ شروع کر دیا ہے۔ فرانس کی یہ کوشش ہے کہ پیرس امن ڈیل کی چھتری تلے زیادہ سے زیادہ سیاسی و عسکری گروپوں کو لا کر لیبیا میں خانہ جنگی کی صورت حال کا مکمل طور پر خاتمہ کیا جا سکے۔

طرابلس پہنچنے کے بعد انہوں نے فائز السراج سے طرابلس میں ملاقات کی۔ السراج کے علاوہ انہوں نے لیبیا کے مشرقی حصے میں سرگرم کمانڈر خلیفہ حفتر کے مخالف گروپوں کے سیاسی رہنما عبدالرحمٰن سویحلی سے بھی ملاقات کی ہے۔ فرانسیسی وزیر خارجہ نے سویحلی سے ملاقات کے لیے مصراتہ کا سفر بھی کیا۔ شمال مغربی شہر مصراتہ کو خلیفہ حفتر کے مخالفین کا گڑھ قرار دیا جاتا ہے۔ طرابلس میں قائم ایک پارلیمانی کونسل کی سربراہی بھی سویحلی کے ہاتھ میں ہے۔

ویڈیو دیکھیے 02:54

لیبیا کے عوام معمول کی زندگی کے خواہاں

 رواں برس جولائی میں اقوام متحدہ کی یونٹی حکومت کے وزیراعظم فائز السراج اور مشرقی حصے کے کمانڈر خلیفہ حفتر نے فائربندی کی ڈیل کے علاوہ اگلے عام انتخابات کے انعقاد کی ایک ڈیل پر دستخط کیے تھے۔ حفتر نے اپنے زیر قبضہ شہر بن غازی پہنچ کر اس ڈیل کے مختلف حصرں پر تنقید کرتے ہوئے اس سے علیحدگی اختیار کرنے کا تاثر بھی دیا تھا۔

لیدریاں اپنے اس دورے کے دوران تبروک بھی جائیں گے اور وہاں پہنچ کر وہ مشرقی لیبیا کی پارلیمنٹ کے اراکین کے ساتھ ملاقاتیں کریں گے۔

DW.COM

Audios and videos on the topic