1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

فارمولا ون میں ‘بٹن کے بٹن’ کا کمال

امسالہ فارمولا ون موٹر ریسنگ میں اتوار کے روز چھٹی مرتبہ کامیابی حاصل کرنے والے ڈرائیور جینسن بٹن کے بقول وہ اپنی کارمیں مزید تبدیلیاں لانا چاہتے ہیں کیونکہ ان کے حریف ریڈ بل ٹیم کے ڈرائیور آئندہ انہیں پریشان کرسکتے ہیں۔

default

جیسن بٹن ٹرکش گراں پری میں جیت کے بعد خوشی کا اظہار کرتے ہوئے

جینسن بٹن نے گذشتہ ویک اینڈ پر استنبول میں جو ٹرکش گراں پری جیتی وہ فارمولا ون سیزن کی سال رواں کی مجموعی طور پر ساتویں ریس تھی۔ بٹن اس سال اب تک کل چھ گراں پری مقابلے جیت چکے ہیں۔ براؤن ٹیم کے 29 سالہ ڈرائیور جینسن بٹن کا کہنا ہے کہ ان کے لئے ’’حالات فی الحال سازگار ہیں تاہم یہ آسانی سے کوئی دوسرا رخ بھی اختیار کرسکتے ہیں۔‘‘

بٹن نے اتوار کی سہ پہر ٹرکش گراں پری دوڑ سب سے آگے رہتے ہوئے پول پوزیشن سے شروع نہیں کی تھی کیونکہ یہ پوزیشن نوجوان جرمن ڈرائیور سیباستیان فیٹل کےپاس تھی، لیکن اس کے باوجود جینسن بٹن اس دوڑ میں کامیاب رہے۔ اس میں بھی بٹن نے یہ اعزاز حاصل کیا کہ وہ ٹرکش گراں پری جیتنے والے ایسے پہلے فارمولا ون ڈرائیور بن گئے جنہوں نے یہ ریس پول پوزیشن سے شروع نہیں کی تھی۔

Formel 1 Rennen in der Türkei

فیٹل کا کہنا ہے کہ ٹرکش گراں پری میں بٹن نے پاور بٹن کا خوب فائدہ اٹھایا

فارمولا ون میں ڈرائیوروں کی امسالہ عالمی چیمپئین شپ میں پوائنٹس ٹیبل پر اس وقت سب سے آگے برطانیہ کے جینسن بٹن ہی ہیں جن کے پوائنٹس کی تعداد 61 بنتی ہے اور اپنے قریب ترین حریف پر انہیں 26 پوائنٹس کی برتری حاصل ہے۔ مجموعی طور پر اس وقت جینسن بٹن کے بعد ڈرائیوروں کی رینکنگ میں اپنے 35 پوائنٹس کے ساتھ برازیل کے Rubens Barrichello ہیں۔

ریڈ بل ٹیم کے جرمن ڈرائیورسیباستیان فیٹل وہ واحد ڈرائیور ہیں جنہوں نے اس سال بٹن کو پہلی مرتبہ چائنیز گراں پری میں شکست دی تھی۔ ٹرکش گراں پری میں فیٹل تیسری پوزیشن پر رہے۔

21 سالہ فیٹل کا کہنا ہے کہ استنبول میں براؤن ٹیم اور جینسن بٹن کی رفتار کا ریڈبل کے پاس کوئی توڑ نہیں تھا۔ اس جرمن ڈرائیور کی عالمی چیمپئین شپ میں اب تک 29 پوائنٹس کے ساتھ تیسری پوزیشن ہے۔

واضح رہے کہ اس بار فارمولا ون ریسنگ میں پہلی مرتبہ گاڑیوں میں پاور بٹن لگانے کی اجازت بھی دے دی گئی ہے جسے دباتے ہی گاڑی کی رفتار میں کئی گنا اضافہ ہو جاتا ہے۔ اس کے علاوہ فارمولا ون ریسنگ میں جیتنے والے ڈرائیوروں میں ان کی پوزیشن کے مطابق پوائنٹس کی تقسیم کا نیا فارمولا بھی متعارف کرایا گیا ہے۔

سیباستیان فیٹل کے بقول ترکی میں جینسن بٹن اور براؤن ٹیم نے پاور بٹن کا بھرپور فائدہ اٹھایا۔ شاید اسی لئے استنبول گراں پری میں جینسن بٹن کی انتہائی تیز رفتار گاڑی کو دیکھتے ہوئے تماشائی چیخ چیخ کر کہہ رہے تھے: ’بٹن، بٹن دباؤ!‘

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : مقبول ملک