1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

غزہ سے افواج کا جلد انخلاء چاہتے ہیں : اولمرٹ

غزہ میں جنگ بندی جاری ہے اور اسرائیل نے غزہ پٹی سے افواج کا انخلاء شروع کردیا ہے۔ اسرائیلی وزیر اعظم ایہود المروٹ نے کہا ہے کہ ان کی افواج غزہ سے جلد از جلد نکل جانے کی خواہاں ہیں۔

default

اسرائیلی وزیر اعظم ایہود اولمرٹ

ایہود اولمرٹ نے زور دیاکہ افواج کے مکمل انخلا کے لئے مستقل اور پائیدار جنگ بندی کا معاہدہ ناگزیر ہے۔ حماس اور اسرائیل نے اتوار کے دن جنگ بندی کا اعلان کیا۔

اسلامی عسکریت پسند تنظیم حماس نے ایک ہفتے کی جنگ بندی کا اعلان کرتے کہا کہ ایک ہفتے کے اندر اندر اسرائیلی افواج مکمل طور پر غزہ پٹی سے نکل جائیں اور غزہ پٹی کی ناکہ بندی ختم کی جائے۔

Hamas Ismail Hanija in Gaza

عسکریت پسند تنظیم حماس کے رہنما اسماعیل ہانیہ

دوسری جانب حمّاس کے رہنما اسمعیل حنیہ نے کہا ہے کہ غزّہ جنگ میں اسرائیل کو خدا کی جانب سے فتح نصیب ہوئی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ غزّہ جنگ میں اسرائیل اپنے اہداف حاصل کرنے میں ناکام رہا ہے۔

اس سے قبل مصر کے شہر شرم الشیخ میں اتوار کے روز یورپی اور عرب ممالک کے رہنماؤں کا ایک اجلاس منعقد ہوا جس میں اسرائیل سے غزّہ سے افواج کے فوری انخلا کا مطالبہ کیا گیا۔ اجلاس میں طے کیا گیا کہ جلد ہی غزّہ کے لیے ایک بین الاقوامی امدادی کانفرنس منعقد کی جائے گی۔ مذکورہ اجلاس میں جرمن چانسلر انگیلا میرکل نے بھی شرکت کی۔

اسرائیل اور حماس جنگجووں کےمابین تین ہفتوں تک جاری رہنے والی جنگ میں کم ازکم تیرہ سو فلسطینی اور دس فوجیوں سمیت کل تیرہ اسرائیلی ہلاک ہوئے۔ دوسری طرف فلسطینی صدر ممود عباس نے فلسطینی علاقوں میں متحدہ قومی حکومت بنانے پر زور دیا ہے۔

DW.COM