1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

غزّہ کی صورتِ حال کی زمہ دار حمّاس ہے: امریکی صدر جارج بش

ہفتے کی صبح اسرائیلی فضائیہ نے غزّہ پٹی پر کم از کم بیس میزائل داغے۔ ستائیس دسمبر دو ہزار آٹھ کو فلسطینی عسکری تنظیم حمّاس کے خلاف اسرائیل کی فوجی کارروائی دوسرے ہفتے میں داخل ہوگئی ہے۔

default

ایک اندازے کے مطابق حمّاس کے پاس پچیس ہزار کے قریب مسلّح جنگ جو ہیں

اسرائلی حملوں میں مرنے والوں کی تعداد تقریباً ساڑھے چار سو اور زخمیوں کی تعداد دو ہزار کے لگ بھگ ہے جن میں سے اکثر کی حالت تشویش ناک ہے۔

جمعے اور ہفتے کی درمیانی شب اسرائیلی میزائل حملے کے نتیجے میں حمّاس کے سینیئر رہنما ابو زکریا الجمال کے ہلاک ہونے کی بھی اطلاعات ہیں۔ حمّاس کے بیشتر رہنما اسرائیلی حملوں سے بچنے کے لیے روپوش ہوچکے ہیں یا زیرِذمین پناہ لیے ہوئے ہیں۔

Nizar Rayan Führer Hamas

نزر ریان نامی حمّاس رہنما کو اسرائیل نے یکم جنوری دو ہزار نو کو میزائل حملے میں ہلاک کیا تھا۔ ان کے ساتھ ان کی اہلیہ اور بچّے بھی مارے گئے تھے۔


اطلاعات کے مطابق غزّہ کی سرحد کے قریب اسرائیلی ٹینک جمع ہونا شروع ہوگئے ہیں اور امکان ہے کہ اسرائیل غزّہ پر زمینی حملہ کسی بھی وقت شروع کرسکتا ہے تاہم حمّاس نے اسرائیل کو انتباہ کیا ہے کہ وہ کسی بھی ذمینی فوجی کارروائی سے اجتناب کرے۔ تاہم امریکی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ غزّہ میں ذمینی کارروائی کا فیصلہ اسرائیل خود کرے گا مگر اس کو عام شہریوں کی ہلاکتوں سے گریز کرنا چاہیے۔ امریکی صدر جارج بش نے ایک بیان میں غزّہ کی صورتِ حال کا زمہ دارحمّاس کو ٹہرایا ہے۔ دوسری جانب امریکی وزیرِ خارجہ کونڈولیزا رائس نے بھی حمّاس پر کڑی تنقید کی ہے۔

Condoleezza Rice bei Mahmoud Abbas Palästina

امریکی وزیرِ خارجہ کونڈولیزا رائس اور فلسطینی صدر محمود عبّاس


غزّہ میں صورتِ حال انتہائی تشویش ناک ہے اور اقوامِ متحدہ اور انسانی حقوق کی تنظیموں نے صورتِ حال کو انسانی المیہ قرار دیا ہے۔ دوسری جانب دنیا کے مختلف ممالک میں غزّہ میں اسرائلی فوجی کارروائی کے خلاف احتجاجی ریلیاں نکالے جانے کا سلسلہ بھی جاری ہے۔


دریں اثناء جرمن وزارتِ خارجہ نے مسلمان ممالک پر زور دیا ہے کہ وہ اسرائیل پر حمّاس کے راکٹ داغے جانے کے عمل کو بند کروان میں اپنا اثرو رسوخ استعمال کریں۔ اس حوالے سے سعودی عرب میں اسلامی ممالک کی تنظیم او آئی سی کے اجلاس سے قبل جرمن وزیرِ خارجہ فرانک والٹر اشٹائن مائر نے اپنے ترک ہم منصب سے ملاقات بھی کی۔

Israel Palästinenser Angriff auf Gaza

غزّہ کی صورتِ حال کو اقوامِ متحدہ اور انسانی حقوق کی بین الاقوامی تنظیموں نے انسانی المیہ قرار دیا ہے


اسرائیل اور حمّاس کے درمیان جنگ بندی کے لیے بین الاقوامی کوششیں بھی زور پکڑ رہی ہیں۔ فرانسیسی صدر نکولا سارکوزی مشرقِ وسطیٰ کا دو روزہ دورہ کر رہے ہیں جب کہ یورپی یونین کا اس حوالے سے ایک اہم اجلاس کل ہوگا۔