1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

اہم عالمی خبریں | 22.02.2017 | 18:33

شام میں قیام امن کے لیے مذاکراتی عمل پر ڈے مستورا کا ردعمل

اقوام متحدہ کے مندوب برائے شام اسٹیفان ڈے مستورا نے کہا ہے کہ شام میں قیام امن کی خاطر جمعرات کے دن سے شروع ہونے والے امن مذاکرات سے انہیں کسی پیشرفت کی کوئی امید نہیں ہے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس مقصد کی خاطر مذاکرات کے مختلف ادوار کا شروع ہونا شامی تنازعے کے سیاسی حل میں مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنیوا مذاکرات میں شام کے سیاسی حل پر بات کی جائے گی جبکہ قزاقستان کے دارالحکومت میں ہونے والے مذاکرات میں شام میں جنگ بندی وقفے کو یقینی بنانے کی کوشش کی جائے گی۔

عراقی فورسز کی مغربی موصل کی طرف پیشقدمی جاری

عراقی میں سکیورٹی فورسز کی طرف سے مغربی موصل میں داعش کے خلاف کارروائی کے نتیجے میں سینکڑوں افراد گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔ ویک اینڈ پر شروع ہوئے اس تازہ فوجی آپریشن کے نتیجے میں لوگوں کے بے گھر ہونے کا یہ پہلا واقعہ رپورٹ کیا گیا ہے۔ داعش کے جنگجوؤں کے خلاف کارروائی میں عراقی فورسز کو مقامی ملیشیا گروہوں اور امریکی اتحادی افواج کا تعاون بھی حاصل ہے۔ روئٹرز کے مطابق دو سو بچوں اور خواتین کو بدھ کے دن محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا گیا ہے۔ اس کارروائی کے نتیجے میں لاکھوں افراد کے بے گھر ہونے کا اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے۔

شامی فوج نے حلب کے قریب ایک علاقے کا قبضہ حاصل کر لیا

شامی فوج اور اس کے حامیوں نے حلب کے مضافات میں ایک علاقے کو باغیوں سے آزاد کرا لیا ہے۔ اس کی تصدیق شامی خانہ جنگی پر نظر رکھنے والی تنظیم سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے بھی کر دی ہے۔ شامی فورسز کی طرف سے یہ پیشقدمی ایک ایسے موقع پر ہوئی ہے جب شامی حکومت اور باغیوں کے نمائندے جنیوا میں ہونے والے مذاکرات کے لیے پہنچ چکے ہیں۔ شام میں قیام امن کے لیے یہ مذاکرات اقوام متحدہ کی کوششوں سے ہو رہے ہیں۔ شامی حکومت کی حامی حزب اللہ کے میڈیا یونٹ کے مطابق شامی فوج اور اس کے حامیوں نے حلب کے مغرب میں واقع علاقہ سوق الجبز پر قبضہ کر لیا ہے۔

امریکا، ٹرانس جینڈر بچوں سے متعلق اہم گائیڈ لائنز کو ختم کرنے کا ارادہ

امریکی میڈیا کے مطابق صدر ڈونلڈ ٹرمپ کی انتظامیہ پبلک اسکولوں میں ٹرانس جینڈر اسٹوڈنٹس کے حقوق کے لیے متعارف کرائی جانے والی اہم گائنڈ لائنز کو ختم کرنا چاہتی ہے۔ روئٹرز نے سفارتی ذرائع کے حوالے سے بتایا ہے کہ اس حوالے سے ایک نیا مسودہ بدھ کے دن جاری کر دیا جائے گا۔ سابق امریکی صدر باراک اوباما کے دور میں یہ گائیڈ لائنز متعارف کرائی گئی تھیں، جس کا مقصد اسکولوں میں ٹرانس جینڈر بچوں کے ساتھ امتیازی سلوک کو ختم کرنا ہے۔ ان گائنڈ لائنز کے مطابق ٹرانس جینڈر بچے اپنی جنس سے مطابقت کے حوالے سے مردانہ یا زنانہ ٹوائلٹس استعمال کر سکتے ہیں۔

جارجیا کے شہریوں کے لیے یورپی ویزے کی شرط ختم

یورپی یونین کے رکن ممالک نے جارجیا کے شہریوں کے لیے ویزا کی شرط ختم کرنے پر اتفاق کر لیا ہے۔ یورپی یونین کے سفیر نے بتایا کہ اس طرح اب سابقہ سوویت یونین کی اس ریاست کے باسی نوے دن تک شینگن زون میں قیام کر سکیں گے۔ اس کے لیے انہیں فنگر پرنٹس والے بائیو میٹرک پاسپورٹ کی ضرورت ہو گی۔ اس فیصلے کی یورپی وزراء کونسل کی طرف سے تصدیق ابھی باقی ہے۔ اندازہ ہے کہ مارچ کے وسط سے اس پر عمل درآمد شروع ہو جائے گا۔

افغان مہاجرین کا تیسرا گروپ بھی جرمنی بدر

جرمن حکومت ایسے مزید افغان مہاجرین کو ملک بدر کر رہا ہے، جن کی پناہ کی درخواستیں مسترد ہو چکی ہیں۔ مجموعی طور پر افغان مہاجرین کا یہ تیسرا گروپ ہے، جسے کابل حکومت کے ساتھ ایک ڈیل کے تحت واپس ان کے ملک روانہ کیا جا رہا ہے۔ حکام نے بتایا ہے کہ تقریبا پچاس افغان مہاجرین کو بدھ کے دن میونخ ایئر پورٹ سے کابل کے لیے روانہ کیا جا رہا ہے۔ انسانی حقوق کے اداروں نے اس طرح افغان مہاجرین کی واپسی کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور اس سلسلے میں بدھ کی شب ایک احتجاجی ریلی بھی منعقد کی جا رہی ہے۔

روہنگیا مسلمانوں کی دوران حراست ہلاکت، تحقیقات شروع

میانمار کی سکیورٹی فورسز نے دوران حراست آٹھ روہنگیا مسلمانوں کی ہلاکت کی وجوہات جاننے کے لیے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ ان افراد کو راکھین صوبے میں فوجی کریک ڈاؤن کے دوران گرفتار کیا گیا تھا۔ انسانی حقوق کے مطابق اس ریاستی کریک ڈاؤن کے باعث میانمار میں سینکڑوں روہنگیا مسلمان ہلاک جبکہ ہزاروں ملک سے فرار ہو چکے ہیں۔ اقوام متحدہ کے مطابق کم ازکم تہتر ہزار روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش جانے پر بھی مجبور ہوئے ہیں۔

جرمن صوبے باویریا میں نقاب پر پابندی

جرمنی کے جنوبی صوبے باویریا کی کابینہ نے مخصوص عوامی مقامات پر خواتین کے نقاب کرنے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ صوبائی وزیر داخلہ یوآخم ہیرمان نے کابینہ کے اجلاس کے بعد کہا کہ مکمل نقاب کیے ہوئے یا برقعہ پہنے ہوئے خواتین عوامی سلامتی کے لیے خطرہ ہیں اور لوگوں کے ساتھ میل جول میں بھی رکاوٹ ہیں۔ اس مسودہ قانون کے مطابق صوبے باویریا کے شہری اداروں، یونیورسٹیوں، اسکولوں، کنڈر گارٹنز اور عوامی سلامتی کے شعبوں اور انتخابات کے دوران خواتین اپنے چہروں کو مکمل طور پر نہیں چھپا سکیں گی۔ اس قانون کی پارلیمان سے منظوری ہونا ابھی باقی ہے۔

جرمنی دفاعی بجٹ بڑھانے کو تیار ہے، وزیر خارجہ

جرمن وزیر خارجہ زیگمار گابریئل نے کہا ہے کہ نیٹو رکن ممالک سے اپنے وعدوں کے مطابق برلن حکومت آئندہ برسوں کے دوران ملکی دفاعی بجٹ میں اضافہ کرے گی۔ تاہم انہوں نے کہا کہ جرمن حکومت کو اپنے جنگی ماضی کو مد نظر رکھتے ہوئے ہمسایہ ممالک کے خوف کو ذہن میں رکھنا چاہیے۔ آج برلن میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس امر کا جائزہ لینا ضروری ہے کہ اگر جرمنی یورپ میں ایک بڑی عسکری طاقت بنتا ہے تو آیا ہمسایہ ممالک حقیقی طور پر پرسکون رہیں گے۔ گابریئل نے مشرقی یوکرائن میں فعال روس نواز باغیوں اور کییف حکومت پر زور بھی دیا کہ وہ امن کی خاطر جنگ بندی کی ڈیل پر کاربند رہیں۔

جرمنی دفاعی بجٹ بڑھانے کو تیار ہے، وزیر خارجہ

جرمن وزیر خارجہ زیگمار گابریئل نے کہا ہے کہ نیٹو رکن ممالک سے اپنے وعدوں کے مطابق برلن حکومت آئندہ برسوں کے دوران ملکی دفاعی بجٹ میں اضافہ کرے گی۔ تاہم انہوں نے کہا کہ جرمن حکومت کو اپنے جنگی ماضی کو مد نظر رکھتے ہوئے ہمسایہ ممالک کے خوف کو ذہن میں رکھنا چاہیے۔ آج برلن میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اس امر کا جائزہ لینا ضروری ہے کہ اگر جرمنی یورپ میں ایک بڑی عسکری طاقت بنتا ہے تو آیا ہمسایہ ممالک حقیقی طور پر پرسکون رہیں گے۔ گابریئل نے مشرقی یوکرائن میں فعال روس نواز باغیوں اور کییف حکومت پر زور بھی دیا کہ وہ امن کی خاطر جنگ بندی کی ڈیل پر کاربند رہیں۔

شام میں قیام امن کے لیے مذاکراتی عمل پر ڈے مستورا کا ردعمل

اقوام متحدہ کے مندوب برائے شام اسٹیفان ڈے مستورا نے کہا ہے کہ شام میں قیام امن کی خاطر جمعرات کے دن سے شروع ہونے والے امن مذاکرات سے انہیں کسی پیشرفت کی کوئی امید نہیں ہے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس مقصد کی خاطر مذاکرات کے مختلف ادوار کا شروع ہونا شامی تنازعے کے سیاسی حل میں مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنیوا مذاکرات میں شام کے سیاسی حل پر بات کی جائے گی جبکہ قزاقستان کے دارالحکومت میں ہونے والے مذاکرات میں شام میں جنگ بندی وقفے کو یقینی بنانے کی کوشش کی جائے گی۔

شامی فوج نے حلب کے قریب ایک علاقے کا قبضہ حاصل کر لیا

شامی فوج اور اس کے حامیوں نے حلب کے مضافات میں ایک علاقے کو باغیوں سے آزاد کرا لیا ہے۔ اس کی تصدیق شامی خانہ جنگی پر نظر رکھنے والی تنظیم سیریئن آبزرویٹری فار ہیومن رائٹس نے بھی کر دی ہے۔ شامی فورسز کی طرف سے یہ پیشقدمی ایک ایسے موقع پر ہوئی ہے جب شامی حکومت اور باغیوں کے نمائندے جنیوا میں ہونے والے مذاکرات کے لیے پہنچ چکے ہیں۔ شام میں قیام امن کے لیے یہ مذاکرات اقوام متحدہ کی کوششوں سے ہو رہے ہیں۔ شامی حکومت کی حامی حزب اللہ کے میڈیا یونٹ کے مطابق شامی فوج اور اس کے حامیوں نے حلب کے مغرب میں واقع علاقہ سوق الجبز پر قبضہ کر لیا ہے۔

ترکی میں خواتین فوجی افسران کے ہیڈ اسکارف پہننے پر پابندی ختم کردی گئی

ترکی میں مسلح افواج کی خواتین ارکان پر عائد وہ پابندی ختم کر دی گئی ہے، جس کے تحت انہیں ہیڈ اسکارف پہننے کی اجازت نہیں تھی۔ جدید ترکی میں مسلح افواج کی خواتین اہلکاروں پر مسلم عورتوں کا مخصوص ہیڈ اسکارف پہننے پر ہمیشہ ہی سے پابندی عائد رہی تھی۔ ترک نیوز ایجنسی انادولو کے مطابق ملکی وزارت دفاع نے اب اس پابندی کو ختم کر دینے کا فیصلہ کیا ہے اور اس حوالے سے آرمڈ فورسز میں عملی اصلاحات کا باضابطہ حکم بھی جاری کر دیا گیا ہے۔ اس پابندی کے خاتمے کا اطلاق ترک مسلح افواج میں جنرل سٹاف، کمانڈ ہیڈکوارٹرز اور ان کے جملہ ذیلی شعبوں میں فرائض انجام دینے والی تمام خواتین افسران اور فوجیوں پر ہو گا۔

بین الاقوامی فوجداری عدالت کو چھوڑنے کا حکومتی فیصلہ، جنوبی افریقی عدالت نے روک دیا

جنوبی افریقہ کی ایک عدالت نے بین الاقوامی فوجداری عدالت کو چھوڑنے کے حکومتی منصوبے کا راستہ روک لیا ہے۔ جنوبی افریقہ کی طرف سے گزشتہ برس اکتوبر میں کہا گیا تھا کہ اس نے آئی سی سی کو چھوڑنے کے لیے اقوام متحدہ سے باقاعدہ درخواست کر دی ہے۔ جنوبی افریقہ نے یہ فیصلہ سوڈان کے صدر عمر البشیر کے دورہ جنوبی افریقہ کے موقع پر پیدا ہونے والا تنازعے بعد دی تھی۔ آئی سی سی نے عمر البشیر کے خلاف جنگی جرائم کے الزامات میں وارنٹ گرفتاری جاری کیے ہوئے ہیں، تاہم جنوبی افریقہ کی حکومت نے یہ کہتے ہوئے سوڈانی صدر کو گرفتار کرنے سے انکار کر دیا تھا کہ بطور سربراہ ریاست انہیں استثنیٰ حاصل ہے۔ شمالی گاؤٹینگ کی عدالت نے صدر اور وزراء کو حکم دیا ہے کہ وہ آئی سی سی کو چھوڑنے کا نوٹس فی الفور واپس لیں۔

شام میں قیام امن کے لیے مذاکراتی عمل پر ڈے مستورا کا ردعمل

اقوام متحدہ کے مندوب برائے شام اسٹیفان ڈے مستورا نے کہا ہے کہ شام میں قیام امن کی خاطر جمعرات کے دن سے شروع ہونے والے امن مذاکرات سے انہیں کسی پیشرفت کی کوئی امید نہیں ہے۔ تاہم انہوں نے کہا کہ اس مقصد کی خاطر مذاکرات کے مختلف ادوار کا شروع ہونا شامی تنازعے کے سیاسی حل میں مددگار ثابت ہو سکتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ جنیوا مذاکرات میں شام کے سیاسی حل پر بات کی جائے گی جبکہ قزاقستان کے دارالحکومت میں ہونے والے مذاکرات میں شام میں جنگ بندی وقفے کو یقینی بنانے کی کوشش کی جائے گی۔

افغان مہاجرین کا تیسرا گروپ بھی جرمنی بدر

جرمن حکومت ایسے مزید افغان مہاجرین کو ملک بدر کر رہا ہے، جن کی پناہ کی درخواستیں مسترد ہو چکی ہیں۔ مجموعی طور پر افغان مہاجرین کا یہ تیسرا گروپ ہے، جسے کابل حکومت کے ساتھ ایک ڈیل کے تحت واپس ان کے ملک روانہ کیا جا رہا ہے۔ حکام نے بتایا ہے کہ تقریبا پچاس افغان مہاجرین کو بدھ کے دن میونخ ایئر پورٹ سے کابل کے لیے روانہ کیا جا رہا ہے۔ انسانی حقوق کے اداروں نے اس طرح افغان مہاجرین کی واپسی کو تنقید کا نشانہ بنایا ہے اور اس سلسلے میں بدھ کی شب ایک احتجاجی ریلی بھی منعقد کی جا رہی ہے۔

عراقی فورسز کی مغربی موصل کی طرف پیشقدمی جاری

عراقی میں سکیورٹی فورسز کی طرف سے مغربی موصل میں داعش کے خلاف کارروائی کے نتیجے میں سینکڑوں افراد گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہو گئے ہیں۔ ویک اینڈ پر شروع ہوئے اس تازہ فوجی آپریشن کے نتیجے میں لوگوں کے بے گھر ہونے کا یہ پہلا واقعہ رپورٹ کیا گیا ہے۔ داعش کے جنگجوؤں کے خلاف کارروائی میں عراقی فورسز کو مقامی ملیشیا گروہوں اور امریکی اتحادی افواج کا تعاون بھی حاصل ہے۔ روئٹرز کے مطابق دو سو بچوں اور خواتین کو بدھ کے دن محفوظ مقامات پر منتقل کر دیا گیا ہے۔ اس کارروائی کے نتیجے میں لاکھوں افراد کے بے گھر ہونے کا اندیشہ ظاہر کیا گیا ہے۔

جارجیا کے شہریوں کے لیے یورپی ویزے کی شرط ختم

یورپی یونین کے رکن ممالک نے جارجیا کے شہریوں کے لیے ویزا کی شرط ختم کرنے پر اتفاق کر لیا ہے۔ یورپی یونین کے سفیر نے بتایا کہ اس طرح اب سابقہ سوویت یونین کی اس ریاست کے باسی نوے دن تک شینگن زون میں قیام کر سکیں گے۔ اس کے لیے انہیں فنگر پرنٹس والے بائیو میٹرک پاسپورٹ کی ضرورت ہو گی۔ اس فیصلے کی یورپی وزراء کونسل کی طرف سے تصدیق ابھی باقی ہے۔ اندازہ ہے کہ مارچ کے وسط سے اس پر عمل درآمد شروع ہو جائے گا۔

روہنگیا مسلمانوں کی دوران حراست ہلاکت، تحقیقات شروع

میانمار کی سکیورٹی فورسز نے دوران حراست آٹھ روہنگیا مسلمانوں کی ہلاکت کی وجوہات جاننے کے لیے تحقیقات شروع کر دی ہیں۔ ان افراد کو راکھین صوبے میں فوجی کریک ڈاؤن کے دوران گرفتار کیا گیا تھا۔ انسانی حقوق کے مطابق اس ریاستی کریک ڈاؤن کے باعث میانمار میں سینکڑوں روہنگیا مسلمان ہلاک جبکہ ہزاروں ملک سے فرار ہو چکے ہیں۔ اقوام متحدہ کے مطابق کم ازکم تہتر ہزار روہنگیا مسلمان بنگلہ دیش جانے پر بھی مجبور ہوئے ہیں۔

آڈیو سنیے 04:00