1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

عراق میں ایک درجن سے زائد بم حملے: کم ازکم 15 افراد ہلاک

آج اتوار کو عراقی دارالحکومت بغداد کے اندر اور اس کے گرد و نواح میں ہونے والے ایک درجن سے زائد بم دھماکوں کے نتیجے میں کم از کم 15 افراد ہلاک اور 74 سے زائد زخمی ہو گئے ہیں۔

default

23 اپریل 2010 ء میں صدر سٹی میں تواتر سے متعدد بم حملوں میں ایک درجن سے زائد جانیں ضایع ہوئی تھیں

مقامی ذرائع کے مطابق سب سے زیادہ ہلاکتوں کا باعث بغداد سے شمال کی جانب 25 کیلو میٹر کے فاصلے پر واقعہ علاقے تاجی میں ہونے والا خود کُش بم حملہ بنا۔ عراق کی وزارت دفاع نے تاجی میں ہونے والے خود کُش بم حملے میں ہلاک ہونے والوں کی تعداد 14 اور زخمیوں کی 28 بتائی ہے۔ وزارت داخلہ کے ایک اہلکار نے نام ظاہر نہ کرتے ہوئے اس خود کُش بم حملے کی تصدیق کی ہے۔

Anschlag Irak Botschaft

گزشتہ برس بغداد میں ایرانی سفارتخانے پر ہونے والے کار بم حملے کے بعد کا سین

آج اتوار کو سب سے پہلے ایک بم دھماکہ مقامی وقت کے مطابق صبح نو بجے تاجی میں سڑک کے کنارے ایک کار میں نصب بم کے پھٹنے سے ہوا۔ اس واقعہ کے رونما ہوتے ہی مقامی باشندے اور امدادی عملے کے اراکین وقوعہ پر پہنچنا شروع ہوئے ہی تھے کہ ایک خود کُش بمبار نے خود کو بم سے اڑا دیا۔ اُدھر بغداد سے جنوب کی طرف واقع علاقے ال عالم میں آج سڑک کے کنارے چار بم دھماکے ہوئے جبکہ پولیس اسٹیشن کے نزدیک ایک کار میں نصب بم کے پھٹنے سے بھی خوفناک دھماکہ ہوا۔ ان واقعات کے نتیجے میں کم از کم دو افراد جاں بحق اور 15 دیگر زخمی ہوئے، جن میں تین پولیس اہلکار بھی شامل تھے۔

بغداد کے جنوب ہی میں سعدیہ نامی ایک اور مقام پر سڑک کے کنارے ہونے والےایک کار بم حملے میں تین افراد کے شدید زخمی ہونے کی اطلاع ہے۔

Irak Anschlag südlich von Baghdad

شعیہ آبادی والے عراق علاقے مسلسل دہشت گردی کا نشانہ بنے ہوئے ہیں

دریں اثناء عراق کی وزارت داخلہ نے کے اہلکاروں نے بتایا کہ شعیہ آبادی کی اکثریت والے شہر صدر سٹی میں سڑک کے کنارے دو علیحدہ علیحدہ بم دھماکے ہوئے۔ ایک دھماکہ ایک ہسپتال کے نزدیک اور دوسرا ایک گنجان بازار کے نزدیک ہوا۔ دہشت گردی کی ان کارروائیوں میں کم از کم 2 افراد لقمہ اجل بنے ، جبکہ 14 زخمی ہوئے ہیں۔ پولیس کے مطابق ان میں سے ایک دھماکہ کار بم پھٹنے کے نتیجے میں ہوا۔

اُدھر شمالی بغداد میں ایک کار بم کی مدد سے پولیس کے ایک اعلیٰ عہدیدار کے قافلے کو نشانہ بنایا گیا جس کے نتیجے میں ایک شہری ہلاک اور پانچ دیگر افراد زخمی ہو گئے۔ زخمی ہونے والوں میں ایک سینئر کمانڈر کے دو باڈی گارڈز بھی شامل تھے۔

اطلاعات کے مطابق جن علاقوں میں آج بم دھماکے ہوئے ہیں وہاں شیعہ آبادی کی اکثریت ہے۔

ابھی چند روز قبل عراقی شہر کرکوک کی سکیورٹی فورسز پر حملہ ہوا تھا جس میں ستائیس افراد جاں بحق جبکہ درجنوں زخمی ہوئے تھے۔

رپورٹ: کشور مصطفٰی/ خبر رساں ادارے

ادارت: عابد حسین

DW.COM

ویب لنکس