1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

عالمی ہاکی کپ : بھارت میں سیکیورٹی انتظامات تسلی بخش ہیں: آصف باجوہ

پاکستانی قومی ہاکی ٹیم کے مینیجر آصف باجوہ نے بھارت پہنچنے پر کہا ہے کہ عالمی کپ ہاکی کے لئے کئے گئے سیکیورٹی انتظامات پر وہ مطمئن ہیں۔

default

پینلٹی کارنر کے ماہر سہیل عباس

عالمی کپ میں شرکت کے لئے پاکستانی ٹیم پیر کے روز بھارتی دارالحکومت نئی دہلی پہنچی ۔ ممبئی حملوں کے بعد پہلی مرتبہ پاکستان کی کوئی قومی ٹیم بھارت کا دورہ کر رہی ہے۔ اٹھارہ رکنی پاکستانی اسکواڈ، واہگہ بارڈر کے راستے بھارت پہنچا۔ بس کے پندرہ گھنٹے کے طویل سفر کے بعد ہوٹل پہنچنے پرکھلاڑیوں نے صحافیوں سے گفتگو کی۔

پاکستانی ٹیم کے مینیجر آصف باجوہ نے کہا: ’’ عالمی کپ ہاکی میں شرکت کے لئے ہمارے لئے جو حفاظتی انتظامات کئے گئے ہیں ، اس سے ہم خوش ہیں۔ بھارت میں داخل ہونے کے بعد ہوٹل پہنچنے تک ، سیکیورٹی سخت رہی۔‘‘

آصف باجوہ نے کہا کہ وہ امن اور ہم آہنگی کے سفیر بن کر بھارت آئے ہیں اور یہاں ہاکی عالمی کپ میں شرکت کے علاوہ پیار بھی پھیلائیں گے۔ انہوں نے کہا: '' دہشت گردی ایک عالمی مسئلہ ہے، جس کا تعلق صرف پاکستان یا بھارت سے نہیں ہے۔ بھارت عالمی ہاکی کپ کے انعقاد کے لئے ایک محفوظ جگہ ہے‘‘۔

Indien Hockey Team

پاکستان اٹھائیس فروری کو بھارت کے خلاف کھیے گا

پاکستانی ہاکی ٹیم کے اسٹرائیکر ریحان بٹ نے کہا کہ مناسب سیکیورٹی تمام ٹیموں کے لئے ضروری ہے۔ ان کے بقول وہ ابھی تک بھارتی حکومت کی طرف سے مہیا کی جانے والی سیکیورٹی سے کافی حد تک مطمئن ہیں۔ پاکستانی ہاکی ٹیم اٹھائیس فروری کو ٹورنامنٹ کے افتتاحی میچ میں میزبان ملک بھارت کے خلاف کھیلے گی۔ ایک سوال کے جواب میں ریحان بٹ نے کہا کہ وہ عالمی کپ میں کھیل کا آغاز جیت سے کرنا چاہیں گے۔ انہوں نے کہا:'' یہاں آنے سے قبل ہم نے کافی اچھے پریکٹس سیشن کئے، تمام کھلاڑی اپنا سو فیصدی دینے کے لئے تیار ہیں۔ اس میں کوئی شک نہیں کہ بھارت کے خلاف کھیلنا ایک بہت بڑا چلینج ہے لیکن ہم اس کے لئے تیار ہیں۔ ہم تمام ٹیموں کے خلاف اپنی بہترین کارکردگی کا مظاہرہ کریں گے اور مثبت سوچ کے ساتھ کھیلیں گے۔‘‘

پاکستانی اسٹار کھلاڑی فواد شکیل نے کہا کہ اس مرتبہ ٹیم کافی مضبوط ہے اور اچھی کارکردگی دکھانے کی بھر پور کوشش کرے گی۔ انہوں نے کہا:'' ہم ایک اچھی ٹیم ہیں اور ایک اچھے ٹورنامنٹ کی امید کر رہے ہیں۔ ہم یہاں جلدی اس لئے آئے ہیں تاکہ یہاں کے موسم سے مطابقت پیدا کی جا سکے۔ اسی لئے ہم بس کے ذریعے بھارت آئے ہیں۔ اس سے قبل ہم نے جہاز کے ذریعے پچیس فروری کو بھارت پہنچنا تھا۔‘‘

بھارتی ہاکی کے سیکرٹیری نیریندرا بھٹرا نے پاکستانی ٹیم کا استقبال کرتے ہوئے کہا ہے کہ پاکستانی ٹیم بھارت کی خصوصی مہمان ہے۔

رپورٹ عاطف بلوچ

ادارت شادی خان سیف

DW.COM