1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

’صرف ایک اننگز چاہئے‘، یونس خان

سابق پاکستانی ٹیسٹ کپتان محمد یونس خان نے کہا ہے کہ دنیائے کرکٹ میں اپنا لوہا منوانے کے لئے انہیں صرف ایک اچھی اننگز درکار ہے اور اس کے بعد وہ ویسے ہی کھیلیں، جیسا کہ ان کی پہچان ہے۔

default

سابق ٹیسٹ کپتان یونس خان

ڈوئچے ویلے ریڈیو سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ جنوبی افریقہ کے خلاف اچھی کارکردگی دکھانے کے حوالے سے وہ بہت پراعتماد ہیں۔

پاکستان اور جنوبی افریقہ کی ٹیموں کے مابین پہلا بین الاقوامی ٹوئنٹی ٹوئنٹی میچ منگل کو ابو ظہبی میں کھیلا جا رہا ہے۔ محمد یوسف کے زخمی ہونے کے بعد یونس خان ایک مرتبہ پھر پاکستانی بین الاقوامی کرکٹ ٹیم میں شامل کر لئے گئے ہیں۔

جنوبی افریقہ کے خلاف محدود اوورز کے میچوں کے لئے ٹیم میں جگہ بنانے والے اس سٹار بیٹسمین نے ڈوئچے ویلے شعبہء اردو کے ساتھ خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ اگرچہ وہ کافی لمبےعرصے سے ٹیم سے باہر ہیں لیکن جتنی کرکٹ انہوں نے کھیل رکھی ہے، اس کو سامنے رکھتے ہوئے وہ پر امید ہیں کہ وہ بین الاقوامی کرکٹ میں واپسی پر اپنے مداحوں کو مایوس نہیں کریں گے۔

ڈوئچے ویلے کے نامہ نگار طارق سعید سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ وہ خود کو مکمل طور پر فٹ محسوس کر رہے ہیں اور یہ ثابت کریں گے کہ وہ ٹیم کے لئے اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرسکتے ہیں۔ یونس خان کی ڈوئچے ویلے کے ساتھ تفصیلی گفتگو آپ نیچے دئے گئے آڈیو لنک کو کلک کر کے سن سکتے ہیں۔

Kricket Waqar Younis

پاکستان کے کوچ وقار یونس نے یونس خان کی واپسی پر خوشی کا اظہار کیا ہے

دوسری طرف پاکستانی ٹیم کے کوچ وقار یونس نے بھی کہا ہے کہ محمد یونس دیگر کھلاڑیوں کے مقابلے میں بہت زیادہ فٹ ہیں اور ان کا مورال کافی بلند ہے۔ انہوں نے یونس خان کی ٹیم میں واپسی پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یونس خان نے پاکستانی کرکٹ ٹیم کے لئے بہت کچھ کیا ہے اوران سے مستقبل میں بھی امید کی جا رہی ہے۔

ڈوئچے ویلے سے گفتگو کرتے ہوئے وقار یونس نے کہا کہ سپاٹ فکسنگ کی زد میں آئے ہوئے فاسٹ بولرز محمد آصف اورمحمد عامر کی عدم موجودگی کے باوجود ٹیم کا بولنگ اٹیک کافی مضبوط ہے۔ تاہم انہوں نے بیٹنگ لائن کی کمزوریوں پر کچھ پریشانی کا اظہار ضرور کیا۔ وقار نے کہا کہ ٹوئنٹی ٹوئنٹی میچوں میں جنوبی افریقہ سے جیتا جا سکتا ہے تاہم ون ڈے میچوں میں مقابلہ سخت ہوگا۔

پاکستان کرکٹ ٹیم متحدہ عرب امارات میں جنوبی افریقہ کے خلاف دو ٹوئنٹی ٹوئنٹی، پانچ ون ڈے اور دو ٹیسٹ میچوں کی سیریز کھیل رہی ہے۔ پاکستان میں سکیورٹی خدشات کے بعد یہ مقابلے وہاں منتقل کئے گئے ہیں ورنہ انہی دنوں میں جنوبی افریقہ کی کرکٹ ٹیم کو پاکستان کا دورہ کرنا تھا۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: مقبول ملک

DW.COM