1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

صدام حسین کے خلاف عدالتی کارروائی انجام کی طرف بڑھتی ہوئی

عراق میں سابق حکمران صدام حسین کے خلاف مقدمے کی کارروائی 16 اکتوبر تک کے لئے ملتوی کر دی گئی ہے۔ توقع کی جا رہی ہے کہ تب سابق آمر اور سات ساتھی ملزمان کے خلاف مقدمے کا کوئی فیصلہ بھی سنا دیا جائے گا۔

default

آج کی کارروائی کے دوران صدام حسین عدالت کے کمرے میں موجود نہیں تھے۔ البتہ اُن کی جگہ سابق نائب صدر طٰہٰ یاسین رمضان اور انقلابی عدالت کے سابق چیئرمین عواد حامد البندر عدالت میں حاضر تھے۔ دونوں کا کہنا تھا کہ یہ مقدمہ غیر قانونی ہے۔

سن 1982ء میں دُجَیل نامی گاﺅں میں شیعہ مسلمانوں کے قتلِ عام کے الزام میں اِن سب کو موت کی سزا ہو سکتی ہے۔ اگست میں صدام حسین کےخلاف کردوں کی نسل کُشی کے الزام میں ایک دوسرے مقدمے کی کارروائی شروع ہو گی۔

دریں اثناء بغداد کے وَسط میں ایک اور بم دھماکے اور کئی ایک گرینیڈ حملوں کے نتیجے میں کم از کم 31 افراد مارے گئے ہیں۔ اِس سے پہلے عراقی وزیرِ اعظم نوری المالکی نے امریکی کانگریس سے اپنے خطاب میں اِس بات پر زور دیا کہ عراق بدستور دہشت گردی کے خلاف بھرپور اقدامات کا عزم رکھتا ہے۔