1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

سائنس اور ماحول

شمسی توانائی ، آلودگی سے پاک ذریعہ

انسانی زندگی کی نقل و حرکت کا انحصار توانائی پر ہے۔ آج جس بڑے پیمانے پر توانائی کا استعمال ہو رہا ہے اس سے خدشہ یہ ہے کہ توانائی کے ذخائر بہت دنوں تک ہمارا ساتھ نہیں دے سکیں گے۔

default

سورج صدیوں سے توانائی کا ایک حیرت انگیز منبع

توانائی کے یہ ذخائر اور ذرائع ماحول کو بھی آلودہ کر رہے ہیں۔ اس حوالے سے عہد حاضر کے سائنس داں سورج کی روشنی سے توانائی حاصل کرنے کے تجربات میں مصروف ہیں اور کافی حد تک انھیں کامیابی بھی حاصل ہوئی ہے۔ اگر سائنسی تحقیق اسی رفتار سے ہوتی رہی تو وہ دن دور نہیں جب سورج کی روشنی سے طاقت حاصل کرکے ہر وہ کام کیا جائے گا جو آج قدرتی تیل سے ہو رہا ہے اور جس کے ذخائر محدود ہیں۔

Wüstensonne

سورج کی دھوپ کا بڑا حصہ بطور توانائی استعمال کیا جا سکتا ہے

سورج کی دھوپ اپنے آپ میں آلودگی سے پاک ہے اور بہ آسانی میسر ہے۔ اس توانائی میں نہ دھواں ہے، نہ کثافت اور نہ ہی آلودگی۔ تحقیق یہ بتاتی ہے کہ دیگر ذرائع سے حاصل توانائی کے مقابلے میں سورج کی روشنی سے 36 گنا زیادہ توانائی حاصل ہوسکتی ہے۔ سورج اپنی توانائی X-Ray سے لے کر Radio-Wave کے ہر Wave-Length پر منعکس کرتا ہے۔ اسپکٹرم (Spectrum) کے 40 فیصد حصے پر یہ توانائی نظر آتی ہے اور 50 فیصد شمسی توانائی انفرا ریڈ (Infra-Red) اور بقیہ Ultra-Violet کی شکل میں نمودار ہوتی ہے۔

Italien EU Jose Manuel Barroso Welt Energiekongress

دنیا بھر میں ہائڈرو کاربنز کے زیادہ استعمال نے موحال پر انتہائی منفی اثرات مرتب کئے ہیں۔ اس حوالے سے دنیا بھر میں بحث شدت اختیار کر چکی ہے

دھوپ سے حاصل ہونے والی توانائی ”سولر انرجی“ یا ”شمسی توانائی“ کہلاتی ہے۔ دھوپ کی گرمی کو پانی سے بھاپ تیار کرکے جنریٹر چلانے اور بجلی بنانے میں بھی استعمال کیا جا سکتا ہے۔

Ölförderung

حال ہی میں جاپان میں شمسی توانائی سے چلنے والا پہلا مال بردار سمندری جہاز اپنے پہلے سمندری سفر پرروانہ ہو گیا۔ ماحولیاتی آلودگی کے مسائل اور ایندھن کی بچت کی کوششوں کے تناظر میں یہ منصوبہ شیپنگ کمپنی اوریگا اور نیپسن آئل کارپوریشن نے مشترکہ طور پر شروع کیا تھا۔

Portugal Solaranlage in Serpa

پرتگال میں قائم ایک شمسی توانائی کے مرکز کا منظر

شمسی توانائی سے چلنے والے سمندری مال بردار جہاز میں بیک وقت 6400 گاڑیاں لادنے کی گنجائش ہے۔ جہاز میں شمسی توانائی سے چلنے والے 328 پینلز قائم کئے گئے ہیں جن پر تقریباً 1.68 ارب ڈالر کی لاگت آئی ہے۔

ابتدائی طور پر یہ مال بردار جہاز ٹویوٹا موٹر ساز کمپنی کی گاڑیاں دیگر ممالک تک پہنچے گا۔ منصوبے کے منتظمین کاکہنا ہے کہ یہ جہاز 60 ہزار 213 ٹن وزنی ہے اور شمسی توانائی پر چلنے والا یہ دنیا کا سب سے بڑا جہاز ہے۔