1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

شمالی کوریا: اعلیٰ قیادت میں تبدیلی کے امکانات

شمالی کوریا کی حکمران کیمونسٹ پارٹی نے کہا ہے کہ وہ نئی قیادت کے چناؤ کے لئے ستمبر میں ورکرز پارٹی WPK کا کنوینشن منعقد کریں گے۔

default

ملکی فوج اور سیاسی منظر نامے پر کئی تبدیلیوں کے بعد کوئی تیس سال بعد اس کنوینش کا انعقاد کیا جا رہا ہے۔ شمالی کوریا کی سرکاری خبر رساں ایجنسی KCNA کے مطابق نئے سربراہ کو منتخب کرنے کے لئے یہ خصوصی کنوینشن ستمبر کے اوائل میں منعقد کیا جائے گا۔ ناقدین کا خیال ہے کہ کیمونسٹ کوریا کے موجودہ رہنما کم یونگ اِل کی جگہ ان کے چھوٹے بیٹے کم یونگ اُون کو پارٹی کا نیا رہنما منتخب کیا جا سکتا ہے۔ سیاسی مبصرین کے مطابق اس کنوینشن میں پیونگ یانگ کی اس پارٹی کے انتظامی ڈھانچے میں کئی اہم تبدیلیاں بھی لائی جائیں گی۔

Nordkorea Rally in Pjöngjang am Kim Il Sung Platz als Zeichen der Solidarität

کیمونسٹ پارٹی اب بھی پالیسی معاملات میں فوج کی رہنمائی کرتی ہے

68 سالہ اِل کے بارے میں خیال کیا جاتا ہے کہ وہ شدید علیل ہیں۔ مختلف خبروں کے مطابق سن 2008 کے دوران اِل سٹروک کا شکار ہو گئے تھے، جس کے بعد سے وہ اپنی ذمہ داریاں ٹھیک طریقے سے نبھانے کے قابل نہیں ہیں۔

سیاسی تحزیہ نگاروں کا خیال ہے کہ گزشتہ کچھ سالوں کے دوران شمالی کوریا کی کیمونسٹ سیاسی جماعت کی اہمیت کافی کم ہو گئی ہے اور کئی اہم ملکی امور میں ملکی فوج پر انحصار کافی زیادہ ہو گیا ہے، تاہم یہ سیاسی جماعت ابھی بھی فوج کو پالیسی سطح پر گائیڈ کر رہی ہے۔

کم یونگ اِل کے تیسرے بیٹے اُون کی عمر اس وقت ستائیس سال ہے اور کئی حلقوں میں یہ شک پایا جاتا ہے کہ نا تجربہ کار ہونے کی وجہ سے کیا وہ پارٹی کی اعلیٰ قیادت مؤثر طریقے سے سنبھال سکیں گے۔ سوئٹزرلینڈ سے اعلیٰ تعلیم یافتہ اُون کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ گزشتہ کچھ سالوں کے دوران وہ اپنے والد کے ساتھ ملکی سیاست میں عملی طور پر سرگرم ہیں۔

Wahl in Nordkorea

گزشتہ کچھ برسوں میں کیمونسٹ پارٹی کے اندر کئی اہم تبدیلیاں کر گئی ہیں

سن 1980ء میں منعقد ہوئے ورکرز پارٹی کے ایک کنوینشن میں کم یونگ اِل کو ان کے والد کے جگہ پارٹی کا نیا رہنما بنایا گیا تھا۔ اس وقت ان کی عمر اڑتیس برس تھی۔ سن 1994ء میں کم اِل سونگ کی وفات کے بعد کم یونگ اِل نے اپنے فرائص باضابطہ طور پر سنبھالے تھے۔

شمالی کوریا کی کیمونسٹ پارٹی میں اعلیٰ سطح کی تبدیلیوں کے لئے منعقد کئے جانے والے اس کنوینشن کا اعلان اس وقت کیا گیا جبکہ ایک روز قبل یعنی پچیس جون کو شمالی کوریا نے ہمسایہ ملک جنوبی کوریا کے خلاف لڑی جانے والی جنگ کی ساٹھ سالہ تقریبات منائیں۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: عاطف توقیر

DW.COM