1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

شربت بی بی ایف آئی اے کی حراست میں

اپنی سبز آنکھوں کی وجہ سے شہرت پانے والی افغان خاتون شربت بی بی کو پاکستان میں ایف آئی اے نے غیر قانونی دستاویزات کے ساتھ رہائش اختیار کرنے کے الزام میں گرفتار کر لیا ہے۔

پاکستانی میڈیا رپورٹس کے مطابق شربت بی بی کو پشاور میں ان کے گھر سے گرفتار کیا گیا ہے۔ گزشتہ برس تک پاکستانی حکام شربت بی بی کے بارے میں تحقیقات کر رہے تھے۔ یہ خاتون اس وقت بہت مشہور ہو گئی تھیں جب سن 1985 میں نامور جریدے ’نیشنل جیوگرافک‘ نے ان کی تصویر شائع کی تھی۔ اُس وقت شر بت بی بی بارہ سال کی تھی۔

پاکستانی انگریزی اخبار ڈان کے مطابق گزشتہ برس ’نادرا‘ کی جانب سے شربت بی بی اور دو مرد جن کا دعویٰ ہے کہ وہ شربت بی بی کے بیٹے ہیں، انہیں پاکستانی شناختی کارڈ جاری کیے گئے تھے۔ نادرا حکام اس الزام کو مسترد کرتے ہیں۔ ڈان اخبار لکھتا ہے کہ نادرا کے فارم کے مطابق شربت بی بی کے دو بیٹے ہیں لیکن ایف آئی اے کے ایک افسر نے بتایا کہ شربت بی بی کی دو بیٹیاں اور ایک دو سالہ بیٹا ہے۔ ڈی ڈبلیو کے نامہ نگار دانش بابر کے مطابق ایف آئی اے شربت بی بی کے شوہر اور اس کے بچوں کو تلاش کر رہی ہے۔ شربت بی بی کو غیر قانونی دستاویزات رکھنے کے جرم میں سات سے چودہ سال تک سزا ہو سکتی ہے اور انہیں افغانستان ملک بدر کیا جا سکتا ہے۔

غیر ملکیوں کو  قانونی دستاویزات کے بغیر پاکستانی شناختی کارڈ جاری کرنے کے جرم میں نادرا اہلکاروں کے خلاف بھی تحقیقات شروع کر دی گئی ہیں۔