1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

شاہ رُخ کی ’حراست‘: ایک تنازعہ

امریکی ریاست نیو جرسی کے نیوآرک فضائی اڈے پر بالی وڈ اسٹار شاہ رُخ خان کی ’حراست، کے معاملے نے اب ایک تنازع کی شکل اختیار کرلی ہے۔ بھارت نے امریکہ سے وضاحت طلب کی ہے کہ آخر شاہ رُخ کو امریکی ائیر پورٹ پر کیوں روکا گیا؟

default

’’ائیرپورٹ پر روکا گیا کیوں کہ میرے نام میں خان ہے‘‘

شاہ رُخ خان سے کل ہفتے کو نیوآرک ائیر پورٹ پر تقریباً دو گھنٹے تک پوچھ گچھ کی گئی جس کے بعد معروف فلم اداکار نے کہا انہیں ’’غصّہ بھی آیا اور ان کی تذلیل بھی ہوئی‘‘۔ شاہ رُخ کے مطابق انہیں اس لئے روکا گیا کیوں کہ ان کا ایک مسلم نام ہے۔

شاہ رُخ کو امریکہ میں بھارتی سفارت خانے کی مداخلت کے بعد ہی ائیرپورٹ سے جانے کی اجازت دی گئی۔

امریکی حکام نے تاہم تاہم اس بات سے انکار کیا ہے کہ شاہ رُخ خان کو حراست میں لے لیا گیا تھا۔ امریکی حکام کا کہنا ہے کہ شاہ رُخ سے ہر مسافر کی طرح معمول کے قوانین اور ضوابط کے مطابق پوچھ گچھ کی گئی۔ ’’شاہ رُخ خان سے صرف 66 منٹ تک معمول کی پوچھ گچھ کی گئی۔‘‘

Polizeischutz für Bollywood Filme

شاہ رخ خان اب تک ستر سے زائد بالی وڈ فلموں میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھاچکے ہیں

اس سے قبل شاہ رُخ خان نے بتایا تھا کہ انہیں ’’حراست‘‘ میں رکھنے کی وجہ ان کے نام کا آخری حصہ 'خان' بنا۔ 43 سالہ فلم اسٹار کا یہ بھی کہنا تھا کہ انہوں نے امیگریشن حکام کو آگاہ کر دیا تھا کہ وہ ایک فلم اسٹار ہیں۔

دریں اثناء بھارتی وزیر اطلاعات امبیکا سونی نے کہا کہ شاہ رُخ خان کو حراست میں رکھا گیا یا نہیں، وہ اس بارے میں کچھ نہیں جانتیں، تاہم امریکہ میں مذہبی بنیادوں پر اب تک ایسے متعدد واقعات سامنے آچکے ہیں۔

بھارت میں شاہ رُخ خان کے پرستاروں میں بھی غم و غصّہ پایا جاتا ہے جنہوں نے اس خبر کے منظر عام پر آنے کے بعد سوشل نیٹ ورکنگ ویب سائٹس پر مزمتی بیان بازی شروع کر دی۔

شاہ رُخ کا کہنا تھا کہ وہ امریکی حکومت سے معذرت کے طلب گار نہیں ہیں۔ ان کے اس دورہ امریکہ کا مقصد اپنی نئی فلم 'مائی نیم از خان' )میرانام خان ہے( کی پروموشن ہے۔

خبررساں ادارے روئٹرز نے شاہ رُخ خان کے حوالے سے بتایا کہ وہ نیوجرسی کے ایئرپورٹ پر ایمیگریشن حکام کے برتاؤ پر سخت برہم ہیں اور اسے ہتک آمیز سمجھتے ہیں۔

شاہ رُخ خان اب تکم کم از کم ستر فلموں میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھاچکے ہیں اور وہ بھارت میں ایک بہت بڑے اسٹار مانے جاتے ہیں۔

گوہر نذیر گیلانی، کشور مصطفیٰ

DW.COM