سیاحوں سے بھرے یونانی جزیرے کوس میں زلزلہ، دو سیاح ہلاک | حالات حاضرہ | DW | 21.07.2017
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

سیاحوں سے بھرے یونانی جزیرے کوس میں زلزلہ، دو سیاح ہلاک

یونانی جزیرہ کوس کو آج جمعہ اکیس جولائی کے روز زلزلے کے شدید جھٹکوں کا سامنا رہا۔ اس زلزلے نے قریبی ترک جزیرے بودرم پر موجود سیاحوں کو خوفزدہ کر دیا۔ کوس جزیرے پر مہاجرین کی کثیر تعداد بھی پائی جاتی ہے۔

یونانی پولیس کے مطابق اس زلزلے کی وجہ سے سیاحتی جزیرے کوس میں ایک انتالیس سالہ ترک شخص اور ایک بائیس برس کا سویڈش نوجوان ہلاک ہوئے ہیں۔ یہ سیاح کوس جزیرے کے نائٹ کلب اور ریسٹورانٹوں کے علاقے میں موجود تھے کہ علی الصبح آنے والے زلزلے کی لپیٹ میں آ گئے۔ ان کی ہلاکت امکاناً ایک قریبی عمارت کی دیوار گرنے سے ہوئی ہے۔ کوس کے علاوہ بودرم میں کئی سڑکیں عمارتوں کے ملبوں سے بھری ہوئی ہیں۔

وسطی اٹلی طاقتور ور زلزلے سے پھر لرز اٹھا

انڈونیشیا میں شدید زلزلہ، کم از کم 92 ہلاک

ترکی میں انسانوں کے لائے ہوئے زلزلے کا خطرہ، انقرہ کے میئر

کوس میں 120 اور بودرم پر 80 افراد کے زخمی ہونے کا بتایا گیا ہے۔ اِن زخمیوں میں کم از کم سات سیاح شدید زخمی ہیں۔ زخمیوں کو یونانی شہروں ایتھنز اور کریٹ منتقل کر دیا گیا ہے۔ ایک سویڈش سیاح کی دونوں ٹانگیں بھاری ملبے کے نیچے آنے سے پوری طرح ضائع ہو  گئی ہیں۔

Griechenland Seebeben in der Ägäi (picture alliance/dpa/AP/KosToday/Uncredited)

کوس جزیرے پر زلزلے کے بعد سیاحوں میں خوف و ہراس پھیل گیا تھا

زلزلے سے صرف یونانی جزیرے کوس پر ہی نہیں خوف و ہرس نہيں پھیلا بلکہ قریبی ترک جزیرہ بودرم کو بھی شدید جھٹکوں کا سامنا رہا۔ زلزلے کے بعد پیدا ہونے والے آفٹر شاکس زیادہ زوردار نہیں ہیں اور اس باعث جزیرے پر تعطیلات منانے والے سیاحوں نے اپنی ممکنہ واپسی کو مؤخر کر دیا ہے۔

ویڈیو دیکھیے 01:47

اٹلی میں پھر طاقتور زلزلہ

بودرم اور کوس پر ملبہ گرنے سے سڑکوں پر کھڑی کئی کاروں کو بھی شدید نقصان پہنچا ہے۔ زلزلے کے بعد کوس کے ہوائی اڈے کو عارضی طور پر بند بھی کر دیا گیا تھا۔ مقامی حکام کے مطابق کوس میں واقع عثمانی دور کی تاریخی و قدیمی مسجد میں زلزلے کے جھٹکوں نے دراڑیں ڈال دی ہیں۔

امریکی جیولوجیکل سروے کے مطابق زلزلے کی وجہ زیر سمندر زمینی چٹانوں میں پیدا ہونے والی شکست و ریخت ہو سکتی ہے۔ اِس امریکی ادارے نے یہ بھی بتایا کہ جمعے کو علی الصبح آنے والے اس 6.7 شدت کی شدت کے زلزلے کا مرکز ترک سیاحتی جزیرے بودرم سے قریب ساڑے دس کلومیٹر جنوب جب کہ یونانی جزیرے کوس سے قریب 16 کلومیٹر مشرق میں زیر سمندر تھا۔

کوس نامی یونانی جزیرے پر بے شمار مہاجرین وسطی یورپ پہچنے کا خواب لیے بھی براجمان ہیں۔

DW.COM

Audios and videos on the topic