1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

سکیورٹی خدشات کے باوجود ’پاکستان مارچ‘ کا انعقاد

سکیورٹی خدشات کے باوجود تحریک انصاف کے رہنما عمران خان آج بروز ہفتہ لاہور میں ’پاکستان مارچ‘ کا انعقاد کر رہے ہیں۔ اس مارچ میں دیگر کئی اپوزیشن جماعتیں بھی شامل ہوں گی۔

پاکستان کے مقامی میڈیا کے مطابق لاہور شہر میں سکیورٹی کے سخت انتظامات کیے گئے ہیں تاہم صوبہ پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناء اللہ نے خبردار کیا ہے کہ کسی ناخوشگوار واقعے کے رونما ہونے کے خطرات بہرحال موجود ہیں۔

رانا ثناء اللہ نے عمران خان سے مطالبہ کیا تھا کہ وہ اس احتجاجی مارچ کو مؤخر کرتے ہوئے اس کا انعقاد عید الفطر کے بعد کریں۔

تاہم عمران خان کا کہنا ہے کہ پاکستان میں سیکورٹی خطرات ہر وقت موجود ہوتے ہیں اور ماضی میں بھی ایسے مواقع پر ان کی پارٹی کو ایسی ہی وارننگ جاری کی گئی تھیں۔

عمران خان نے کہا ہے کہ اس مارچ کے دوران تحریک انصاف کے ممبران پنچاب پولیس کے ساتھ مل کر سکیورٹی کو یقینی بنانے کی کوشش کریں گے۔

شاہدرہ سے شروع ہونے والی یہ ریلی چیئرنگ کراس پر ختم ہو گی جہاں عمران خان اور دیگر شخصیات اپنے حامیوں سے خطاب کریں گے۔

مقامی میڈیا کے مطابق لاہور کے لیے سکیورٹی فول پروف بنانے کی کوشش کی گئی ہے اور سی سی ٹی وی کیمروں کے علاوہ سکیورٹی اہلکاروں کی ایک بڑی تعداد مختلف مقامات پر تعینات کر دی گئی ہے۔

پاکستان تحریک انصاف کے مطابق اس ریلی کا مقصد پاناما لیکس اور اس کے پاکستان پر اثرات کے بارے میں عوام کو آگاہی فراہم کرنا ہے۔

پاکستان تحریک اںصاف کا کہنا ہے کہ ان کی سیاسی جماعت وزیرا عظم نواز شریف کی طرف سے آئین کی خلاف ورزیوں کے بارے میں عوام کو آگاہ کرنے کی خاطر اس طرح کی ریلیاں کا انعقاد کرتی رہی گی۔