1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

سڈنی ٹیسٹ دلچسپ مرحلے میں داخل

سڈنی میں جاری تین ٹیسٹ میچوں کی سیریز کے آخری میچ میں آسٹریلیا نے جنوبی افریقہ کے سامنے 376 رنوں کا ہدف رکھا ہے، اس ہدف کے تعاقب میں جنوبی افریقہ نے چوتھے دن کے کھیل کے اختتام تک ایک وکٹ کے نقصان پر 62 رنز بنالئے ہیں۔

default

گریم سمتھ کی کپتانی میں جنوبی افریقہ نے آسٹریلیا کو آسٹریلیا ہی میں ٹیسٹ سیریز میں شکست سے دوچار کیا

پرتھ اور ملبورن میں کھیلے گئے سیریز کے پہلے دونوں ہی ٹیسٹ میچوں میں جنوبی افریقہ نے آسٹریلیا کو شکست سے دوچار کیا ہے۔

سڈنی ٹیسٹ کے چوتھے روز آسٹریلیا نے اپنی دوسری اننگز میں چار وکٹوں کے نقصان پر 257 رنز بنانے کے بعد اننگز ڈکلئیر کردی، اور اس طرح جنوبی افریقہ کے سامنے ایک ایسا ہدف رکھا جو اسے اپنی پہنچ میں نظر آرہا ہے۔

دوسری اننگز میں آسٹریلیا کی طرف سے کپتان رکی پانٹنگ اور افتتاحی بیٹسمین سائمن کیٹچ نے نصف سنچریاں سکور کیں۔ پہلی اننگز میں سنچری سکور کرنے والے مائکل کلارک نے دوسری اننگز میں اکتالیس رنز بنائے جبکہ مائک ہسی پینتالیس رنوں پر ناٹ آوٴٹ رہے۔

Ricky Ponting Mannschaftskapitän Cricket Australien

بھارت کے بعد جنوبی افریقہ کے ہاتھوں ٹیسٹ سیریز میں شکست کا سامنا کرنے والے آسٹریلوی کپتان رکی پانٹنگ خود پر دباٴو محسوس کررہے ہیں

اپنے ٹارگیٹ کا پیچھا کرتے ہوئے جنوبی افریقہ کا آغاز اچھا نہیں رہا۔ دو رنز کے مجموعی سکور پر جنوبی افریقہ نے اپنا پہلا وکٹ ایم مورکل کے روپ میں کھویا۔ لیکن اُس کے بعد نیل میک کینزی اور ہاشم آملا نے اننگز کو سنبھالا اور کھیل کے اختتام تک شراکت میں ٹیم کے لئے ساٹھ رنز جوڑے۔

Cricket - England gegen Indien

بھارت میں بھارت کے ہاتھوں آسٹریلیا کو ٹیسٹ سیریز میں شکست ہوئی تھی، بھارتی کپتان مہیندر سنگھ دھونی ٹرافی وصول کرتے ہوئے

اس سے قبل آسٹریلیا نے میچ میں اپنی اپنی پہلی اننگز میں مائکل کلارک اور مٹچل جانسن کی شاندار بیٹنگ کی بدولت 445 رنز بنائے۔ جنوبی افریقہ کی ٹیم پہلی اننگز میں 327 رنز بنائے اور یوں آسٹریلیا کو 118 رنوں کی سبقت حاصل ہوئی۔

دونوں ملکوں کے درمیان ٹیسٹ سیریز کا پہلا میچ پرتھ میں کھیلا گیا جس میں جنوبی افریقہ کو چھہ وکٹوں سے کامیابی ملی جبکہ ملبورن میں کھیلے گئے دوسرے ٹیسٹ میچ میں جنوبی افریقہ نے نو وکٹوں سے فتح حاصل کی۔ اس طرح آسٹریلیا کو سولہ سیزنز بعد اپنے ہی ملک میں ٹیسٹ سیریز میں شکست کا سامنا کرنا پڑا۔

DW.COM