1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

سُشما سوراج  نے پاکستانی بچے کو بھارت کا میڈیکل ویزا دے دیا

اسلام آباد میں قائم انڈین سفارت خانے نے ایک ڈھائی سالہ بیمار پاکستانی بچے کو علاج کی غرض سے بھارت لے جانے کے لیے میڈیکل ویزا جاری کر دیا ہے۔ یہ ویزا بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج کی ہدایت پر جاری کیا گیا ہے۔

اس بیمار بچے کے والد کین سِڈ نے 24 مئی کو ٹوئٹر پر بیٹے کی تصویر شیئر کرتے ہوئے پنی ٹوئٹ میں لکھا تھا،’’ میرے  بیٹے کا علاج  ممکن کیوں نہیں ہے ؟ کیا سرتاج عزیز یا سشما سوراج کے پاس کوئی جواب ہے۔؟‘‘

 سوشل میڈیا پر یہ ٹوئٹ کافی مرتبہ شیئر کی گئی اور بھارتی شہریوں نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر کے ذریعے سشما سوراج پر زور ڈالا کہ وہ اس پاکستانی بچے کے علاج کے لیے ویزے کا اجراء کروائیں۔

سُشما سوراج نے گزشتہ روز ٹوئٹ میں لکھا،’’ یہ بیمار بچہ تکلیف میں نہیں رہے گا۔ آپ اسلام آباد میں بھارت کے ہائی کمیشن سے رابطہ کریں۔ اسے میڈیکل ویزا دیا جائے گا۔‘‘

آج بھارت اور پاکستان کی مختلف چینلز اور ویب سائٹوں کے مطابق اس بیمار بچے اور اس کے والدین کو بھارت کا ویزا دے دیا گیا ہے۔ ویزا ملنے کے بعد اس بچے کے والد نے ٹوئٹ میں سب کا شکریہ ادا کیا۔ سِڈ  نے اپنی ٹوئٹ میں لکھا،’’یہ بہت خوشی کا باعث ہے کہ اختلافات کے باوجود انسانیت کو برتری حاصل ہوئی ہے۔ آپ سب کی کوششوں کا شکریہ۔‘‘

پاکستان کے انگریزی روزنامہ ڈان کے مطابق اس خاندان کو چار ماہ کا میڈیکل ویزا دیا گیا ہے تاکہ بھارت میں اس بچے کے دل کا آپریشن ہوسکے۔ اس بچے کے والدین گزشتہ تین ماہ سے بھارت کا ویزا حاصل کرنے کی کوشش کر رہے تھے۔

DW.COM