1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

سعودی فوجی اتحاد میں شرکت، پاکستان میں احتجاجی مظاہرے

پاکستان کی طرف سے سعودی عرب کے چونتیس ملکی فوجی اتحاد میں شرکت کے خلاف اسلام آباد اور لاہور میں ہونے والے احتجاجی مظاہروں میں سینکڑوں شیعہ افراد نے شرکت کی جبکہ پاکستان سے اس اتحاد سے علیحدہ ہونے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

آج پاکستانی دارالحکومت اسلام آباد میں سینکڑوں افراد نے پاکستان کی سعودی فوجی اتحاد میں شمولیت کے خلاف احتجاج کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اس اتحاد سے علیحدگی اختیار کر لے۔ اس موقع پر مظاہرین کی طرف سے دفتر خارجہ کو ایک یادداشت بھی پیش کی گئی۔

جمعے کے دن خاتون شیعہ کارکن گلِ زہرا کا ریلی سے خطاب کرتے ہوئے کہنا تھا، ’’ نہ تو پاکستانی فوج اور نہ ہی پاکستانی قوم کرایے پر دستیاب ہے۔ ہم ہر اس اقدام کی مخالفت کریں گے، جس کے تحت آرمی کو چند ارب ریال کی خاطر آل سعود کو بیچنے کی کوشش کی جائے گی۔‘‘

Pakistan Islamabad Demonstration Schiitische Muslime

اسلام آباد میں ایک دوسری ریلی بھی نکالی گئی، جس میں تقریباﹰ پندرہ سو افراد شریک تھے۔ یہ احتجاجی مظاہرہ خاص طور پر سعودی عرب میں شیعہ مذہبی رہنما النمر باقر النمر کو دی گئی موت کی سزا کے خلاف کیا گیا تھا

پاکستان نے جمعرات کو ہی اعلان کیا تھا کہ وہ اسلامی دنیا میں ’’دہشت گردی‘‘ کے خاتمے کے لیے سعودی عرب کے فوجی اتحاد میں شمولیت اختیار کرے گا۔ پاکستان نے یہ اعلان سعودی وزیر خارجہ وزیر خارجہ عادل بن احمد الجبیر کی اسلام آباد میں پاکستانی وزیراعظم سے ملاقات کے بعد کیا تھا۔

سعودی عرب نے چونتیس ملکی اس فوجی اتحاد کا اعلان گزشتہ ماہ کیا تھا اور یہ بھی کہا تھا کہ پاکستان اس کا حصہ ہوگا۔ اس کے بعد پاکستان نے محتاط ردعمل کا مظاہرہ کرتے ہوئے کہا تھا کہ اسے ابھی مزید تفصیلات کی ضرورت ہے اور یہ بھی کہ پاکستان کی اس اتحاد میں شرکت کس حد تک ہو گی۔

اسی طرح اسلام آباد میں ایک دوسری ریلی بھی نکالی گئی، جس میں تقریباﹰ پندرہ سو افراد شریک تھے۔ یہ احتجاجی مظاہرہ خاص طور پر سعودی عرب میں شیعہ مذہبی رہنما النمر باقر النمر کو دی گئی موت کی سزا کے خلاف کیا گیا تھا۔ اس مذہبی رہنما کو دی گئی موت کی سزا کے بعد پھانسی کے بعد سے دونوں ملکوں ایران اور سعودی عرب میں پہلے ہی سے پائے جانے والے اختلافات میں اضافہ ہوا ہے۔

Pakistan Islamabad Demonstration Sunnitische Muslime

اسلام آباد میں سنیوں نے بھی ایک احتجاجی مظاہرہ کیا، جو بنیادی طور پر ایرانی پالیسیوں کے خلاف تھا۔

پاکستان کی اکثریتی آبادی سنی عقیدےسے تعلق رکھتی ہے جبکہ آبادی کا تقریباﹰ بیس فیصد حصہ شیعہ اقلیت پر مشتمل ہے۔ سعودی اتحاد کے خلاف چھوٹے پیمانے پر ریلیوں کا انعقاد آج لاہور میں بھی کیا گیا تھا۔

اسی طرح اسلام آباد میں سنیوں نے بھی ایک احتجاجی مظاہرہ کیا، جو بنیادی طور پر ایرانی پالیسیوں کے خلاف تھا۔ مظاہرین کا احتجاج کرتے ہوئے کہنا تھا کہ تہران حکومت سعودی عرب کے ذاتی معاملات میں ’مداخلت‘ کر رہی ہے۔ مظاہرین کا نعرے لگاتے ہوئے کہنا تھا کہ ’’خادم الحرمين الشريفين کے لیے جان بھی حاضر ہے۔‘‘