1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

سزا یافتہ پاکستانی کھلاڑیوں کے خلاف ٹھوس ثبوت موجود ہیں، لوگارٹ

انٹرنیشل کرکٹ کونسل کے چیف ایگزیکٹیو ہارون لوگارٹ کا کہنا ہے کہ پاکستانی کھلاڑیوں سلمان بٹ، محمد آصف اور محمد عامر پر ٹھوس ثبوتوں کی بنیاد پر پابندیاں عائد کی گئی ہیں۔

default

میچ فکسنگ سکینڈل کی سماعت کرنے والے آئی سی سی کے انسداد بدعنوانی کے ٹریبیونل نے گزشتہ روز ان پاکستانیوں پر پانچ پانچ سال تک بین الاقوامی کرکٹ کے دروازے بند کئے۔

قطر کے دارالحکومت دوحہ میں ان تین پاکستانی کرکٹرز کے معاملے کی سماعت کرنے والے ٹریبیونل نے سابق پاکستانی کپتان سلمان بٹ پر دس سال کی پابندی عائد کی ہے۔ اس سزا میں سے پانچ سال پہلے ہی معطل کردئے گئے ہیں۔ سپاٹ فکسنگ کے تنازعے میں مجرم ثابت ہونے پر بٹ کے ساتھ ساتھ 28 سالہ محمد آصف پر مجموعی طور پر سات سال کی پابندی عائد کی گئی جس میں سے دو سال معطل کئے گئے جبکہ 18 سالہ محمد عامر پر پانچ سالہ پابندی عائد کی گئی ہے۔

Superteaser NO FLASH Pakistan Cricket Mohammad Asif

محمد آصف

قطر سے پاکستان پہنچنے کے بعد لاہور کے ہوائی اڈے پر صحافیوں سے گفتگو میں سلمان بٹ کا کہنا تھا کہ انہیں افسوس ہوا ہے اور تفصیلی فیصلہ سامنے آنے کے بعد مستقبل کا لائحہ عمل واضح کریں گے۔ 26 سالہ سابق پاکستانی ٹیسٹ کپتان نے کہا کہ وہ پر امید ہیں کہ آئی سی کے ضابطہ ء اخلاق کے قانون میں ترمیم کے بعد ان پر عائد کی گئی سزا کی مدت کم ہو جائےگی۔

واضح رہے کہ دوحہ میں آئی سی سی کے انسداد بد عنوانی کے کمیشن کے سربراہ مائیکل بیلوف کہہ چکے ہیں کہ انہوں نے کرکٹ کے نگران ادارے سے ضابطہ ء اخلاق کے قانون میں ترمیم کی درخواست کی ہے۔ اس قانون کے تحت کھیل کے دوران کرپشن میں ملوث ہونے والوں کو کم از کم پانچ سالہ پابندی کی سزا سنائی جاسکتی ہے۔

میڈیا نمائندوں سے گفتگو میں سلمان بٹ کا کہنا تھا کہ وہ کرکٹ سے پیار کرتے ہیں، یہی ان کا ذریعہ روزگار ہے اور وہ جلد اپنا کیریئر دوبارہ سے شروع کرنا چاہیں گے۔

قیاس آرائیاں کی جارہی ہیں کہ نوجوان پاکستانی تیز گیند باز محمد عامر پر عائد پابندی کی مدت میں کمی کے امکانات موجود ہیں۔ اس ضمن میں عامر کے مختصر اور بےداغ کیریئر کا حوالہ دیا جاتا ہے۔

Superteaser NO FLASH Pakistan Cricket Mohammad Amir

‏محمد عامر

اس کے برعکس محمد آصف پر عائد پابندی میں کمی کے امکانات کم بتائے جارہے ہیں۔ واضح رہے کہ سزا پانے والے تینوں پاکستانی کھلاڑی سپاٹ فکسنگ میں ملوث ہونے کے الزامات کی مسلسل تردید کر رہے ہیں۔

پاکستان کرکٹ بورڈ کے چئیرمین اعجاز بٹ کا کہنا ہے کہ پی سی بی ان تین کھلاڑیوں پر عائد پابندی کے خلاف اپیل نہیں کرے گا۔ ان کے بقول یہ معاملہ ان تین کھلاڑیوں اور آئی سی سی کے آپس کا معاملہ ہے۔

رپورٹ : شادی خان سیف

ادارت : عاطف بلوچ

DW.COM