1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

سری لنکا کی ٹیم پر دہشت گردانہ حملہ : چھ کھلاڑی زخمی، آٹھ افراد ہلاک

لاہورمیں منگل کی صبح ایک خون ریز دہشت گردانہ حملے میں سری لنکا کی کرکٹ ٹیم کے چھ کھلاڑی زخمی اور مہمان ٹیم کے سیکیورٹی اسکواڈ میں شامل چھ پولیس اہلکار وں سمیت آٹھ افراد ہلاک ہوگئے۔

default

اس واقعے کے بعد دونوں ملکوں کے درمیان کھیلی جانے والی ٹیسٹ سریز منسوخ کر دی گئی ہے

ذرائع کا کہنا ہے کہ اس واقعہ میں زخمی ہونے والے کھلاڑیوں میں کمارسنگاکارا، کپتان مہیلا جے وردھنےاور سماراویرا بھی شامل ہیں۔ ذرائع کے مطابق جے وردھنے کی ٹانگ پر گولی لگی ہے۔ جن گاڑیوں پر فائرنگ ہوئی ان میں ایمپائرز کو لانے والی گاڑی بھی شامل ہیں جن میں سے ایک ایمپائر شدید زخمی ہیں۔

Anschlag auf Cricket Team in Pakistan

واقعے کے بعد امدادی کارروائیوں کا ایک منظر

اس دہشت گردانہ حملے کے بعد پاکستان اور سری لنکا کے مابین کھیلی جانی والی ٹیسٹ سیریز منسوخ کر دی گئی ہے اور سری لنکن کھلاڑی واپس اپنے وطن روانہ ہو رہے ہیں۔


اطلاعات کے مطابق حملہ آوروں کی تعداد 12 تھی اور ان میں سے ایک دہشت گرد ایک دکان کے آگے ایک بیگ پھینک کر فرار ہوگیا جس میں سے کلاشنکوف اور گولیاں برآمد ہوئی ہیں۔ قذافی سٹیڈیم کے سیکورٹی اہلکار کے مطابق فائرنگ سے قبل بم بھی پھینکے گئے۔

Thilan Samaraweera Cricket Spieler Anschlag in Lahore Pakistan

کھیل کے دوسرے روز ڈبل سنچری بنانے والے سماراویرابھی زخمی ہوئے ہیں

عینی شاہدین کے مطابق جائے حادثہ سے ایک راکٹ لانچر بھی ملا ہے۔ سیکورٹی ذرائع کا کہنا ہے کہ حملہ آوروں نے بلٹ پروف جیکٹیں پہنی ہوئی تھیں اور وہ تربیت یافتہ دہشت گرد معلوم ہوتے تھے۔

Anschlag auf Sri Lanka Cricket Team in Lahore Pakistan

دہشت گردوں نے اندھا دھند فائرنگ کی

یہ واقعہ اس وقت پیش آیا جب سری لنکا کی ٹیم اپنی بس میں قذافی سٹیڈیم میں دوسرے ٹیسٹ میچ کے تیسرے روز کا کھیل کھیلنے جارہی تھی۔ واقعے کے فوری بعد امدادی کارروائیوں کا آغاز کردیا گیا ہے اور زخمی کھلاڑیوں کو سروسز اسپتال منتقل کیا جاچکا ہے جہاں پر انہیں طبی امداد دی جارہی ہے۔

پاکستان کے وفاقی وزیر کھیل پیر آفتاب شاہ جیلانی نے کہا ہے کہ دہشت گردی کے اس واقعے سے غیر یقینی کی صورت حال پیدا ہوگئی ہے اور غیر ملکی ٹیمیں دورہ پاکستان سے ہچکچائیں گی۔ آفتاب شاہ جیلانی نے کہا ہے کہ وہ اس واقعے پر سری لنکن حکومت اور قوم سے معافی مانگتے ہیں۔