1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

سارہ پیلن اگلے ماہ بھارت کے دورے پر

امریکہ میں قدامت پسند رپبلکن پارٹی کی رکن سارہ پیلن اگلے ماہ بھارت کا دورہ کر رہی ہیں۔ ماضی میں نائب صدر کے عہدے کی امیدوارسارہ پیلن کو خارجہ امور میں ناقص تجربے کے باعث تنقید کا سامنا رہا ہے۔

default

امریکی ریاست الاسکا کی سابق گورنر سارہ پیلن کی مشیر اعلیٰ Rebecca Mansour نے ٹوئٹر پر لکھے گئے ایک پیغام کے زریعے بتایا ہے کہ پیلن اگلے ماہ بھارتی دورے میں بھارتی جریدے ’انڈیا ٹو ڈے‘ کے سالانہ نجی اجتماع سے خطاب بھی کریں گی۔

اس پیغام کے ساتھ دیے گئے ان کے دورے کے شیڈیول کے مطابق 19 مارچ کے روز بھارتی دارالحکومت نئی دہلی میں اس حوالے سے معنقد تقریب میں وہ شرکت کریں گی۔ تقریب میں"My Vision of America," یا ’ امریکا کے بارے میں میرا تصور‘ کے عنوان سے پیلن کا کلیدی خطاب ہو گا۔

Sarah Palin beim Parteitag

پیلن کو خارجہ امور میں کم تجربے کی بنا پر تنقد کا نشانہ بنایا جاتا رہا ہے

بھارتی جریدے کی اس تقریب میں ہر سال نمایاں اور قابل ذکر افراد کو خطاب کی دعوت دی جاتی ہے۔اس برس سارہ پیلن کے علاوہ جو دیگر نمایاں افراد خطاب کر یں گے ان میں مصری حزب اختلاف کی نمایاں شخصیت محمد البرادعی، حقوق نسواں کی حامی مصنف Germaine Greer، بھارتی وزیر اعظم من موہن سنگھ اور کشمیری علیحدگی پسند رہنما سید علی گیلانی شامل ہیں۔

یاد رہے کہ سن 2008 میں ہونے والے صدارتی انتخابات میں نائب صدارت کے عہدےکے لیے سارہ پیلن کو رپبلکن پارٹی کی جانب سے نامزد کیا گیا تھا۔ اس دوران انہیں خارجہ پالیسی کے حوالے سے ناتجربہ کاری اور کم علمی کے باعث تنقید کا نشانہ بنایا گیا تھا۔

سارہ پیلن نے صدارتی الیکشن میں حصہ لینے سے قبل صرف ایک بار بیرون ملک سفر کیا تھا جس کا مقصد مشرق وسطی میں تعینات امریکی فوجی اہلکاروں سے ملاقات کرنا تھا۔

رپورٹ: عنبرین فاطمہ

ادارت: شامل شمس

DW.COM