1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

’رونالڈو نے چیمپئنز لیگ کا فائنل جیت لیا‘

یورپی فٹ بال کلبوں کے معتبر ترین ٹورنامنٹ چیمپئنز لیگ کی ٹرافی ریال میڈرڈ نے ایک مرتبہ پھر جیت لی ہے۔ یہ فائنل میچ ہفتہ تین جون کو برطانوی علاقے ویلز کے شہر کارڈیف کے ملینیم اسٹیڈیم میں کھیلا گیا۔

ریال میڈرڈ نے فائنل میچ میں اطالوی فٹ بال کلب ژُووینٹس کو شاندار کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے ہرایا۔ اس طرح چیمپئنز لیگ کی تاریخ میں ریال میڈرڈ وہ پہلی ٹیم بن گئی ہے، جس نے اپنے اعزاز کا کامیابی سے دفاع کیا ہے۔ ریال میڈرڈ نے چیمئنز لیگ کی ٹرافی سن 2016 میں ہسپانوی کلب ایٹلیٹکو میڈرڈ کو اطالوی شہر میلان میں کھیلے جانے والے فائنل میچ میں شکست دے کر حاصل کی تھی۔

ہفتہ تین جون کو اسپین کے مشہور فٹ بال کلب ریال میڈرڈ نے بارہویں مرتبہ چیمپئنز لیگ کا فائنل میچ جیتا۔ رواں برس فٹ بال کا بہترین کھلاڑی قرار دیے گئے کرسٹیانو رونالڈو نے بیسویں منٹ میں گول کر کے اپنی ٹیم کو برتری دلا دی۔ اس سبقت کو ژووینٹس کے کروشیائی فٹ بالر ماریو منزوکِچ نے سات منٹ بعد گول کر کے برابر کر دیا۔ فائنل میچ کا پہلا ہاف ایک ایک گول سے برابر رہا۔

میچ کے دوسرے ہاف میں ریال میڈرڈ کے تابڑتوڑ حملوں کا سامنا اطالوی ٹیم نہ کر سکی اور اُس کے دفاع میں پیدا ہونے والی دراڑوں سے ہسپانوی کلب نے تین گول حاصل کیے۔ دوسری ہاف میں ریال میڈرڈ کے جو تین گول ہوئے، اُن میں رونالڈو نے ایک اور مرتبہ گیند گول پوسٹ میں پہنچانے میں کامیابی حاصل کی۔

Champions League Final Platz in Turin nach Massenpanik bei Public Viewing (Picture alliance/dpa/A. Di Marco/ANSA)

تورین میں چیمپئنز لیگ کا فائنل دیکھنے کے لیے جمع ہجوم میں بم کی موجودگی کی افواہ سے بھگدڑ مچ گئی

میچ ختم ہونے کے بعد تجزیہ کاروں کا کہنا تھا کہ اب یہ نہیں کہا جا سکے گا کہ رونالڈو بڑے میچ کا کھلاڑی نہیں ہے اور اس فائنل میں اُس کی شاندار کارکردگی نے سب ناقدین کو خاموش کر دیا ہے۔ دوسری جانب میچ کے ختم ہونے کے بعد پرتگالی کھلاڑی نے اپنی کلب کی جیت کو شاندار قرار دیتے ہوئے کہا کہ وہ اس میچ میں ایک لڑکے کی طرح کھیل رہے تھے اور اُن کے بدن میں بڑھتی عمر کا کوئی احساس نہیں تھا۔ رونالڈو بتیس برس کے ہو چکے ہیں۔

دوسری جانب اٹلی کے شہر تورین میں ایک مقام پر چیمپئنز لیگ کا فائنل دیکھنے کے لیے جمع ہونے والے ایک ہجوم میں بم کی موجودگی کی افواہ کے بعد بھگدڑ مچ گئی۔ اس بھگدڑ کی وجہ سے کم از کم ایک ہزار افراد کے زخمی ہونے کی اطلاع ہے جن میں سے آٹھ افراد شدید زخمی ہیں۔ یہ امر بھی اہم ہے کہ تورین شہر اٹلی کے فٹ بال کلب ژووینٹس کا گھر ہے۔ اس طرح تورین کے شائقینِ فٹ بال کو بھگدڑ کے علاوہ اپنی ٹیم کی شکست کا صدمہ بھی برداشت کرنا پڑا۔