1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

روس میں سکیورٹی انتظامات کتنے مؤثر، انوکھی مثال

روس میں عوامی سلامتی سے متعلق ایک تازہ مثال نے حکام کی آنکھیں کھول دی ہیں۔ ایک دس سالہ لڑکی صبح گھر سے اسکول کے لیے نکلی اور بغیر کسی ٹکٹ یا شناختی دستاویزات کے بذریعہ ہوائی جہاز ماسکو سے سینٹ پیٹرزبرگ پہنچ گئی۔

ماسکو سے بدھ ستائیس اپریل کو ملنے والی نیوز ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کی رپورٹوں کے مطابق روسی ٹرانسپورٹ پولیس نے بتایا کہ اس واقعے میں ایک کم سن بچی بغیر کسی ہوائی ٹکٹ یا شناختی دستاویزات کے ملکی دارالحکومت ماسکو سے سینٹ پیٹرزبرگ پہنچ گئی۔

ایسوسی ایٹڈ پریس نے لکھا ہے کہ روسی ٹرانسپورٹ پولیس نے آج جس واقعے کی تصدیق کر دی، اس نے روسی ہوائی اڈوں پر سلامتی کے عمومی انتظامات کے بارے میں نئے اور پریشان کن سوال پیدا کر دیے ہیں۔

حکام نے اس دس سالہ روسی بچی کا نام نہیں بتایا لیکن یہ تصدیق کر دی کہ یہ طالبہ منگل 26 اپریل کی صبح اپنے گھر سے اسکول جانے کے لیے روانہ ہوئی تھی اور پھر سہ پہر تک واپس گھر نہ لوٹی۔

سینٹ پیٹرزبرگ کی شہری انتظامیہ کے ایک اہلکار الیگزینڈر ژاننکوف نے روسی خبر رساں اداروں کو بتایا کہ یہ طالبہ اپنے گھر سے ماسکو کے وَنُوکووو ہوائی اڈے پر گئی، جہاں وہ مسافروں کے ایک ایسے ہجوم میں گھل مل گئی، جو سینٹ پیٹرزبرگ جانے والی ایک مسافر پرواز میں سوار ہو رہا تھا۔

Flughafen Domodedowo in Moskau

ماہرین کے مطابق اس واقعے نے ثابت کر دیا ہے کہ روسی ہوائی اڈوں پر سکیورٹی کی صورت حال کتنی ناقص ہے

حکام کے مطابق یہ لڑکی مسافروں میں شامل ایک ایسے خاندان کے ارکان کے ساتھ مل کر طیارے میں سوار ہونے میں کامیاب ہو گئی، جن میں سے کئی کم عمر بچے تھے۔ یہ کم سن مسافر پولیس کے ہاتھ اس وقت لگی جب وہ سینٹ پیٹرزبرگ میں اترنے کے بعد ہوائی اڈے پر اکیلی ادھر ادھر گھوم پھر رہی تھی۔

روس میں بچوں کے حقوق کے تحفظ کے نگران محستب اعلیٰ پاویل استاخوف نے آج اس واقعے کے بارے میں کہا، ’’اس بچی کا یہ ہوائی سفر اس بات کا ثبوت ہے کہ روسی ہوائی اڈوں پر سکیورٹی کی عمومی صورت حال کتنی تشویش ناک حد تک ناقص ہے۔‘‘

حکام نے یہ نہیں بتایا کہ اس لڑکی کو سینٹ پیٹرزبرگ سے واپس ماسکو کب اور کیسے پہنچایا گیا۔