1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

راحت فتح علی خان پر جرمانہ

بھارتی حکام نے پاکستان کے معروف گلوکار راحت فتح علی خان اور ان کے منیجر معروف پر پندرہ پندرہ لاکھ کا جرمانہ عائد کر دیا ہے۔ ان پر الزام تھا کہ وہ غیراعلانیہ طور پر ایک بڑی رقم کے ساتھ غیر ملکی سفر کر رہے تھے۔

default

راحت فتح علی خان اور ان کے ساتھی تیرہ فروری کو اس وقت حراست میں لے لیے گئے تھے، جب وہ ایک لاکھ چوبیس ہزار امریکی ڈالر کی خطیر رقم کے ساتھ نئی دہلی سے براستہ دبئی لاہور جا رہے تھے۔ ان پر غیر قانونی طور پر غیر ملکی کرنسی رکھنے کا الزام عائد کیا گیا تھا۔

Rahat Fateh Ali Khan

راحت فتح علی خان بھارت کی کئی فلموں میں بھی اپنی آواز کا جادو جگا چکے ہیں

بھارتی قوانین کے مطابق کوئی بھی شخص پانچ ہزار امریکی ڈالر سے زائد کی رقم کے ساتھ سفر کرتا ہے، تو اسے حکام کو مطلع کرنا ضروری ہے۔

نئی دہلی سے موصولہ رپورٹوں کے مطابق راحت فتح علی خان اور ان کا منیجر جرمانے کی رقوم ادا کرنے کے بعد واپس پاکستان جا سکیں گے۔ لیکن ایک لاکھ چوبیس ہزار امریکی ڈالر کی جو رقم بھارتی حکام نے اپنے قبضے میں کی ہے، وہ انہیں واپس نہیں کی جائے گی۔

ریونیو انٹیلی جنس اہلکاروں کا حوالہ دیتے ہوئے بھارتی میڈیا نے مزید بتایا ہے کہ راحت فتح علی خان کا پاسپورٹ واپس کر دیا گیا ہے۔ 37 سالہ راحت فتح علی پاکستان کے ایک معروف گلوکار ہیں، جنہوں نے اپنی گائیکی سے بھارت کے علاوہ کئی ممالک میں اپنے مداح بنائے ہیں۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: عاطف توقیر

DW.COM