1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

راجر فیڈرر آٹھویں مرتبہ ومبلڈن ٹائٹل جیتنے والے پہلے کھلاڑی

سوئس ٹینس اسٹار راجر فیڈرر نے آٹھویں مرتبہ ومبلڈن کپ جیت کر ٹینس کی تاریخ میں ایک نیا ریکارڈ قائم کر دیا ہے۔ آج اتوار کے روز کھیلے گئے فائنل مقابلے میں انہوں نے مارین چیلچ کو شکست دی۔

اتوار سولہ مئی سوئس ٹینس اسٹار راجر فیڈرر کے لیے ایک اور تاریخی دن ثابت ہوا۔  انہوں نے مرد کھلاڑیوں کے ومبلڈن کے فائنل مقابلے میں کروشیا کے مارین چیلچ کو سیدھے سیٹوں سے مات دے کر ایک اور کارنامہ سرانجام د دے دیا۔

ریکارڈ: ندال دس بار فرنچ اوپن جیتنے والے پہلے کھلاڑی بن گئے

راجر فیڈرر نے اٹھارہواں گرینڈ سلَیم ٹائٹل جیت لیا

راجر فیڈرر: ایک ہزار بین الاقوامی میچوں کے فاتح

چیلچ اس میچ سے قبل ہی زخمی تھے تاہم زخمی ہونے کے باوجود انہوں نے جم کر فیڈرر کا مقابلہ کرنے کی کوشش کی لیکن فیڈرر کے سامنے ان کی ایک نہ چلی اور وہ 6-3، 6-1، 6-4 سے ہار گئے۔

یوں راجر فیڈرر نے آٹھویں مرتبہ ومبلڈن ٹائٹل اپنے نام کرنے والے دنیا کے اب تک کے واحد کھلاڑی بن گئے ہیں۔ ٹینس کے بڑے سنگل عالمی مقابلوں میں اب تک فیڈرر 19 مرتبہ کامیابی حاصل کر چکے ہیں۔

Wimbledon 2017 | Finale Herren | Roger Federer - Marin Cilic (picture-alliance/empics/J. Walton)

میچ کے دوران ہی زخمی چیلچ اپنے آنسوؤں پر قابو نہ رکھ سکے

جیتنے کے بعد فیڈرر کا کہنا تھا، ’’مجھے یقین نہیں آتا کہ میں اتنی بلندیوں پر پہنچ گیا ہوں۔‘‘ کوئی بھی سیٹ ہارے بغیر ومبلڈن جیتنے کا اعزاز انہیں پانچ برس کے وقفے کے بعد حاصل ہوا ہے، ان کا مزید کہنا تھا، ’’پچھلے برس کے بعد مجھے امید نہیں تھی کہ میں کبھی دوبارہ یہ ٹائٹل جیت پاؤں گا۔ نوواک جوکو وچ سے سن 2014 اور 2015 میں ہارنے کے بعد میرے لیے بڑا مشکل وقت تھا۔ لیکن مجھے ہمیشہ یقین تھا کہ میں دوبارہ گیم میں واپس آؤں گا۔‘‘

جیت کے بعد جب فیڈرر نے اپنے چاروں بچوں کو گرینڈ اسٹینڈ پر دیکھا تو ان کی آنکھیں خوشی کے آنسوؤں سے لبریز ہو گئیں اور انہوں نے دونوں ہاتھوں سے اپنا منہ چھپا لیا۔

دوسری جانب پہلی مرتبہ ومبلڈن فائنل کھیلنے والے کروآٹ کھلاڑی مارین چیلچ نے فائنل مقابلے سے قبل زخمی ہو جانے کو اپنی بدقسمتی قرار دیا۔

DW.COM