1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

دو ٹرینوں میں تصادم، کم از کم بیس افراد ہلاک

پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی میں دو ریل گاڑیوں کے درمیان ہونے والے تصادم کے نتیجے میں کم از کم بیس افراد ہلاک جبکہ درجنوں زخمی ہو گئے ہیں۔ یہ حادثہ کراچی کے قائد آباد اسٹیشن پر آج بدھ کی صبح پیش آیا۔

خبر رساں ادارے اے ایف پی کے مطابق لاہور سے آنے والی فرید ایکسپریس قائد آباد اسٹیشن پر رُکی ہوئی تھی کہ ملتان سے آنے والی ذکریا ایکسپریس تیز رفتاری کے ساتھ اُس سے جا ٹکرائی۔ امدادی کارکنوں نے فوری طور پر لوگوں کو متاثرہ ٹرینوں سے نکالنے کا کام شروع کر دیا۔ اس مقصد کے لیے دھات کو کاٹنے والی مشینوں اور کرینوں کو جائے حادثہ پر پہنچا دیا گیا جبکہ فوج اور پولیس بھی امدادی کاموں میں شریک ہو گئی۔

عینی شاہدوں کے مطابق ایک ٹرین کا انجن مکمل طور پر تباہ ہو گیا ہے۔ کراچی کے ڈسٹرکٹ کوآرڈینیشن افسر ناصر نذیر کے مطابق فوری طور پر نقصانات کا درست اندازہ نہیں ہے مگر دونوں ٹرینوں میں مجموعی طور پر ایک ہزار کے قریب مسافر سوار تھے۔

کراچی کے جناح ہسپتال کی ترجمان ڈاکٹر سیمی جمالی کے مطابق  کم از کم  بیس افراد ہلاک ہوئے ہیں جبکہ ان کے ہسپتال میں 50 کے قریب زخمیوں کو لایا گیا۔

Pakistan Zugunglück in Karachi (Reuters/A. Soomro)

دھات کو کاٹنے والی مشینوں اور کرینوں کو جائے حادثہ پر پہنچا دیا گیا

کراچی کے ایک رہائشی عجب گُل نے خبر رساں ادارے اے ایف پی کے بتایا کہ وہ کام پر جا رہا تھا جب اس کے سامنے یہ حادثہ پیش آیا: ’’اچانک ایک ٹرین تیز رفتاری سے آئی اور اسٹیشن پر پہلے سے کھڑی ٹرین میں جا ٹکرائی جس سے انتہائی زور دار دھماکا ہوا۔‘‘

عجب گُل کا مزید کہنا تھا، ’’دھماکے کے بعد وہاں غبار اور دھوئیں کے بادل پھیل گئے اور گاڑیوں میں سوار لوگوں کی چیخ وپکار کی آوازیں سنائی دینے لگیں۔‘‘ اس کا کہنا تھا کہ موقع پر موجود لوگ فوری طور پر مدد کے لیے پہنچے اور لوگوں کو بوگیوں سے نکالا مگر بہت سے لوگ ایسے تھے جو بُری طرح پھنسے ہوئے تھے۔

اس حادثے کے بعد کراچی کا ملک کے دوسرے حصوں سے ریل کا رابطہ کٹ گیا ہے۔ انتہائی پرانے ریلوے نظام کے سبب پاکستان میں ٹرینوں کے حادثے ہوتے رہتے ہیں۔ آج ہونے والے حادثہ رواں برس فرید ایکسپریس کے ساتھ پیش آنے والا دوسرا حادثہ ہے۔ رواں برس جنوری میں یہ ٹرین پاکستانی صوبہ پنجاب میں ایک پھاٹک پر ایک ویگن سے ٹکرا گئی تھی جس کے نتیجے میں آٹھ افراد ہلاک ہو گئے تھے۔