1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

دوسرا ون ڈے: انگلینڈ پاکستانی ہدف کے تعاقب میں

پاکستان اور انگلینڈ کی ٹیموں کے درمیان لیڈز میں ہونے والے دوسرے ایک روزہ بین الاقوامی میچ میں پاکستانی ٹیم نے انگلینڈ کے سامنے ایک بڑا ہدف رکھا، جسے انگلش ٹیم حاصل کرنے کی کوشش میں مصروف ہے۔

default

کامران اکمل پاکستانی ٹیم کی جانب سے نمایاں بلے باز رہے

پاکستان نے ٹاس جیت کر پہلے بیٹنگ کرنے کا فیصلہ کیا، جو نہایت کامیاب رہا۔ پاکستان نے مقررہ پچاس اوورز میں آٹھ وکٹوں کے نقصان پر 294 رنز بنائے۔ انگلینڈ کی ٹیم کی طرف سے سٹراؤس اور ٹروٹ نے خوبصورت کھیل کا مظاہرہ کرتے ہوئے اس مشکل ہدف کو بہت حد تک قابل حصول بنا دیا ہے۔

پاکستان کی طرف سے ابتدائی بلے بازوں نے ٹیم کو ایک مستحکم بنیاد فراہم کی۔ اوپنگ بیٹسمینوں کامران اکمل اور محمد حفیظ نے بالترتیب 74 اور 43 رنز بنائے۔ کامران اکمل کو کولنگ ووڈ نے ایل بی ڈبلیوآؤٹ کیا جبکہ محمد حفیظ کی وکٹ سوان نے لی۔ اس کے بعد تجربہ کار محمد یوسف نے 46 رنز کی انفرادی اننگ کی مدد سے پاکستانی ٹیم کی پوزیشن کو اور بھی مستحکم کیا۔

Pakistan Sport Cricket Kamran Akmal

کامران اکمل پاکستانی ٹیم کی جانب سے نمایاں بلے باز رہے

اس میچ میں پاکستانی مڈل آرڈر بھی خاصا کامیاب رہا اور نوجوان کھلاڑی اسد شفیق نے نصف سنچری سکور کی جبکہ عمر اکمل نے 28 رنز بنائے۔

کپتان شاہد خان آفریدی اس میچ میں کوئی خاطر خواہ کارکردگی نہ دکھا پائے اور چھ گیندوں پر صرف نو رنز بنا کر اپنی وکٹ گنوا بیٹھے۔ سٹراؤس کی گیند پر ان کا کیچ اینڈریسن نے لیا۔ اس میچ میں انگلینڈ کے بولروں نے 17 ایکسٹراز بھی دئے۔

انگیلنڈ کی طرف سے سب سے کامیاب بولر بروڈ رہے، جنہوں نے دس اوورز میں 81 رنز کے عوض چار وکٹیں حاصل کیں۔ بریسنین، اینڈریسن، سوان اور کالنگ ووڈ نے ایک ایک وکٹ لی۔

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : عصمت جبیں

DW.COM

ویب لنکس