1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

دنیا کا امیر ترین شخص : ماہانہ تنخواہ 24 ہزار ڈالر

میکسیکوکےکارلوس سلم دنیا کے امیر ترین انسان ہیں مگر اس ارب پتی کاروباری شخصیت کی ماہانہ تنخواہ صرف 24 ہزار امریکی ڈالر کے برابر ہے اور وہ اکثر عوامی ذرائع آمدورفت استعمال کرتے ہیں۔

default

اس وقت 70 برس کی عمر کے Carlos Slim کی ایک نئی سوانح عمری کے مطابق میکسیکو کی یہ مشہور زمانہ شخصیت سادہ طرز زندگی پسند کرتی ہے اور دس سال کی عمر میں اپنی کاروباری زندگی کا آغاز کرنے والے کارلوس نے گزشتہ کافی عرصے سے خود اپنی جو ماہانہ تنخواہ مقرر کر رکھی ہے، وہ ہر حال میں اسی میں اپنی گزر بسر کرتے ہیں۔

کارلوس سلم نے اپنی عملی زندگی کا آغاز بچپن میں ٹافیاں، گولیاں اور مشروبات بیچ کر کیا تھا اور بعد کے عشروں میں وہ پے در پے بحرانی حالات میں مختلف شعبوں میں جارحانہ سرمایہ کاری کرتے ہوئے اتنے امیر ہو گئے کہ پہلے میکسیکو کے امیر ترین اور پھر دنیا کے سب سے امیر افراد میں شمار ہونے لگے۔

Der mexikanische Milliardär Carlos Slim

کارلوس سلم نے بچپن میں ٹافیاں اور گولیاں بیچ کر بھی پیسے کمائے

امریکی جریدے فوربس کی طرف سے شائع کی جانے والی دنیا کے امیر ترین افراد کی فہرست میں اس سال میکسیکو کے اس شہری نے مائیکروسافٹ کے بانی اور امریکی شہری بل گیٹس کو پہلی پوزیشن سے ہٹا کر یہ اعزاز اپنے نام کر لیا۔ کارلوس سلم کے اثاثوں کی مجوعی مالیت کا تازہ ترین اندازہ 53.5 بلین ڈالر لگایا جاتا ہے، جو بل گیٹس کی جملہ املاک کی مالیت سے بھی کہیں زیادہ ہے۔

دنیا کے ارب پتی انسانوں کی فہرست میں اول نمبر کی اس کاروباری شخصیت کی سوانح عمری لکھنے والے خوسے مارٹینیز کے مطابق کارلوس سلم کی جملہ املاک کی اصل مالیت ان اندازوں سے کہیں زیادہ ہے، جو Forbes میگزین کی تازہ ترین درجہ بندی میں شائع کئے گئے ہیں۔

مارٹینیز نے سن 2002 ء میں کارلوس سلم کی ایک سوانح عمری لکھی تھی، جس کا ایک نیا ایڈیشن عنقریب ہی پورے لاطینی امریکہ میں فروخت کے لئے جاری کر دیا جائے گا۔ اس کتاب کا نام ’کارلوس سلم، ایک غیر شائع شدہ پورٹریٹ‘ ہے اور اس کے مصنف خوسے مارٹینیز لکھتے ہیں کہ کارلوس کا رویہ کسی بھی معاشرے کی اعلیٰ ترین اشرافیہ یا مختلف ملکوں میں شاہی خاندانوں کے ارکان جیسا نہیں ہے بلکہ وہ انتہائی سادہ سے انسان ہیں، جو سادہ زندگی بسر کرنا پسند کرتے ہیں۔

کارلوس سلم کے والد ایک لبنانی تارک وطن تھے اور ان کی پیدائش میکسیکو سٹی میں سن 1940ء میں ہوئی تھی۔ وہ اپنے والدین کے کل چھ بچوں میں سے پانچویں اولاد تھے۔ ایک نوجوان کے طور پر انہوں نے سول انجینئرنگ کی تعلیم حاصل کی اور پھر اپنی عملی زندگی میں اتنی ترقی کی کہ سن 1990ء میں انہوں نے میکسیکو میں سرکاری انتطام میں کام کرنے والے سب سے بڑے ٹیلی کمیونیکیشن ادارے Telmex کو اکیلے ہی خرید لیا۔

Carlos Slim Reichster Mann der Welt

کارلوس سلم انتہائی سادہ زندگی گزارنے کے قائل ہیں

اس وقت کارلوس سلم کی ایک سلطنت کی سی حیثیت اختیار کر جانے والی کاروباری کامیابیوں کا عالم یہ ہے کہ گزشتہ صرف ایک سال کے دوران ان کی دولت اور کاروباری اثاثوں کی مالیت میں 18.5 بلین ڈالر کا اضافہ ہوا۔ وہ گزشتہ صرف ایک عشرے کے دوران لاطینی امریکہ کے مختلف ملکوں میں 60 بلین ڈالر سے زائد کی سرمایہ کاری بھی کر چکے ہیں۔

خوسے مارٹینیز کے مطابق ستر سالہ کارلوس نے کچھ عرصہ پہلے تک اپنی کلائی پر پلاسٹک کی بنی ہوئی ایک معمولی سے گھڑی باندھی ہوتی تھی اور میکسیکو میں ملکی سٹاک مارکیٹ کا 30 سے لے کر 40 فیصد تک حصہ اپنے کنٹرول میں ہونے کے باوجود انہوں نے ابھی تک اپنی ماہانہ تنخواہ صرف 24 ہزار ڈالر مقرر کر رکھی ہے۔

کارلوس سلم کی ملکیت کاروباری اداروں میں، جن میں ڈپارٹمنٹل سٹور، تعمیراتی کمپنیاں، بینکنگ گروپ اور ٹیلی کمیونیکیشن ادارے بھی شامل ہیں، کبھی کوئی مشیر نہیں رکھے جاتے اور بڑے بڑے عہدوں پر فائز متعدد افراد کے لئے ایک ہی سیکریٹری رکھی جاتی ہے۔

دنیا کی یہ امیر ترین شخصیت نوکرشاہی اور سرخ فیتے کی مداح نہیں ہے اور اپنے فیصلوں میں عملیت پسندی کی قائل ہے۔ کارلوس سلم گروپ کے دفاتر میں اصراف اور نمود و نمائش سے پرہیز کیا جاتا ہے اور کارلوس اپنی زندگی میں بار بار صرف ایک ہی بات کہتے ہیں: ’’سیاستدانوں کے ساتھ زندگی میں کبھی کوئی کاروبار نہ کرو!‘‘

رپورٹ: مقبول ملک

ادارت: عاطف توقیر