’خودکش حملہ آور سعودی شہری تھا‘ | حالات حاضرہ | DW | 08.08.2015
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

’خودکش حملہ آور سعودی شہری تھا‘

سعودی حکام نے کہا ہے کہ دو روز قبل ابھا میں واقع ایک مسجد پر خود کش حملہ کرنے والے شخص کی شناخت کر لی گئی ہے۔ سعودی پولیس کی اس مسجد پر جمعرات کے روز کیے جانے والے اس خودکش حملے میں 15 افراد ہلاک ہوئے تھے۔

جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے نے سعودی وزارت داخلہ کی طرف سے جاری کردہ ایک بیان کے حوالے سے بتایا ہے کہ یہ خودکش حملہ آور سعودی عرب کا ہی باشندہ تھا۔ وزارت داخلہ سے جاری کردہ بیان میں اس حملہ آور کا نام یوسف السلیمان جبکہ عمر اکیس سال بتائی گئی ہے۔

جمعرات چھ اگست کو سعودی عرب کے جنوب مغربی شہر ابھا کی اس مسجد پر حملے کے نتیجے میں گیارہ سعودی سکیورٹی اہلکار مارے گئے تھے جبکہ بنگلہ دیش سے تعلق رکھنے والے چار ورکرز بھی اس دھماکے میں ہلاک ہوئے۔

سعودی حکام نے البتہ یہ نہیں بتایا کہ یوسف کا تعلق انتہا پسند گروہ ’اسلامک اسٹیٹ‘ سے تھا یا نہیں۔ یاد رہے کہ اس خودکش حملے کی ذمہ داری دہشت گرد گروپ داعش نے قبول کر لی تھی۔

قبل ازیں آج ہفتے ہی کے روز داعش کی جانب سے جاری کیے گئے ایک صوتی پیغام میں اس شدت پسند تنظیم نے سعودی عرب میں مزید حملے کرنے کا دھمکی دی ہے۔ اس شدت پسند گروپ سے تعلق رکھنے والے ایک ٹوئٹر اکاؤنٹ پر جاری کی جانے والی ایک ریکارڈنگ خودکش حملہ جو اپنا نام ابوسِنان النجدی بتاتا ہے، سعودی حکمرانوں کو متنبہ کرتا سنائی دیتا ہے کہ وہ جب تک مغرب کے ’پٹھو‘ بنے رہیں گے انہیں سکون اور سلامتی نہیں مل سکتی۔ خبر رساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق اس ریکارڈنگ کے درست ہونے کی تصدیق ابھی تک نہیں ہو سکی۔

اس مسجد پر جمعرات کے روز کیے جانے والے اس خودکش حملے میں 15 افراد ہلاک ہوئے تھے

اس مسجد پر جمعرات کے روز کیے جانے والے اس خودکش حملے میں 15 افراد ہلاک ہوئے تھے

سعودی حکومت نے داعش کے خلاف وسیع پیمانے پر کارروائی کے عزم کا اظہار کیا ہے۔ سعودی عرب امریکی سربراہی میں قائم اس اتحاد کا حصہ ہے جو عراق اور شام میں اسلامک اسٹیٹ کے خلاف فضائی کارروائیوں میں مصروف ہے۔

اس دہشت گرد گروپ نے حالیہ مہینوں کے دوران سعودی عرب، اس کے ہمسایہ ممالک یمن اور کویت میں شیعہ مساجد کو خونریز حملوں کا نشانہ بنایا ہے جس میں درجنوں نمازی ہلاک ہوئے۔