1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

خانہ کعبہ کے قریب دہشت گردی کا منصوبہ ناکام بنا دیا گیا

سعودی حکام کے مطابق مکہ میں مسجد الحرام کے قریب دہشت گردوں کے ایک نیٹ ورک کا صفایا کر دیا گیا ہے۔ سعودی حکومت نے خانہ کعبہ کی سکیورٹی میں اضافہ کرتے ہوئے اس کے اندرونی اور بیرونی علاقے میں اضافی دستے تعینات کر دیے ہیں۔

سعودی عرب کی وزارت داخلہ کے مطابق مکہ میں مسجد الحرام کے قریب پولیس کارروائی کے دوران ایک خود کش بمبار نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا اور اس دھماکے میں چھ غیر ملکیوں سمیت پانچ سکیورٹی اہلکار زخمی ہو گئے۔ پولیس نے خانہ کعبہ کے قریبی علاقوں جِدہ اور اجیاد المصافی میں چھاپے مارے تھے۔ اجیاد المصافی خانہ کعبہ کے احاطے کے انتہائی قریب تنگ گلیوں والا ایک علاقہ ہے۔

اجیاد المصافی ہی میں ایک تین منزلہ عمارت پر پولیس کے چھاپے کے دوران فائرنگ کا تبادلہ بھی ہوا۔ دو طرفہ فائرنگ کے دوران ہی ایک خود کش بمبار نے اپنی بارودی جیکٹ دھماکے سے اڑا دی اور اس دوران یہ عمارت بھی زمین بوس ہو گئی۔ گرتی ہوئی عمارت کی دیواریں اس بلڈنگ سے منسلک ایک کار پارک میں جا گری تھیں۔

سعودی سکیورٹی حکام نے کم از کم پانچ افراد کو گرفتار بھی کر لیا ہے۔ گرفتار ہونے والوں میں ایک عورت بھی شامل ہے۔ وزارت داخلہ نے اس واقعے میں ملوث گروپ کا نام نہیں بتایا لیکن ماضی میں دہشت گرد تنظیموں القاعدہ اور ’اسلامک اسٹیٹ‘ کے حامی گروپوں نے مختلف مقامات پر پرتشدد کارروائیوں کی ذمہ داری قبول کی تھی۔

Mekka Saudi Arabien - Muslime bei Kaaba (picture-alliance/AA/O. Akkanat)

مسجد الحرام کے عین وسط میں خانہ کعبہ مسلمانوں کے لیے دنیا کا مقدس ترین مقام ہے

ان چھاپوں کے بعد سعودی وزارت داخلہ نے واضح کیا کہ دہشت گردی کے نیٹ ورک کو بےنقاب کرتے ہوئے اس گروہ کے دہشت گردانہ منصوبوں کو ناکام بنا دیا گیا ہے۔ وزارت داخلہ کے بیان میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ غیر ملکی آقاؤں کے اشارے پر چلنے والے یہ شدت پسند سعودی مملکت کو عدم استحکام کا شکار کرنے کی کوشش میں تھے۔

یہ کارروائی ایک ایسے وقت پر ہوئی جب سعودی عرب میں رمضان کا مہینہ اختتام کے قریب ہے اور ملکی فرمانروا شاہ سلمان نے اپنے بیٹے پرنس محمد بن سلمان کو نیا ولی عہد مقرر کرنے کا اعلان کیا ہے۔ اسلامی تقویم کے مہینے رمضان کے آخری جمعے کی وجہ سے ان دنوں مسجد الحرام میں لاکھوں افراد عمرے کے لیے جمع ہیں۔ مسجد الحرام کے عین وسط میں خانہ کعبہ مسلمانوں کے لیے دنیا کا مقدس ترین مقام ہے۔

ملتے جلتے مندرجات