1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جی ٹونٹی سمٹ: ہیمبرگ میں شدید جھڑپیں

جرمن شہر ہیمبرگ میں جی ٹونٹی سربراہی اجلاس کے آغاز سے ایک روز قبل مظاہرین اور پولیس کے درمیان شدید جھڑپیں ہوئیں۔ مظاہرین کے علاوہ پولیس کے 76 اہلکار بھی ان جھڑپوں میں زخمی ہوئے۔

ترقی یافتہ اور ابھرتی اقتصادیات کے حامل بیس ملکوں کے گروپ جی ٹوئنٹی کا سربراہ اجلاس آج جمعہ سات جولائی سے جرمن شہر ہیمبرگ میں شروع ہو رہا ہے۔ اس کانفرنس میں شریک ممالک دنیا کی دو تہائی آبادی رکھتے ہیں اور دنیا کی 80 فیصد تجارت اور اقتصادی پیدوار کے حامل بھی یہی ممالک ہیں۔

Deutschland G20 Proteste in Hamburg (Reuters/H. Hanschke)

جی ٹوئنٹی سمٹ کے دوران ہیمبرگ میں اقتصادی عالمگیریت کے مخالفین سمیت بہت سی سماجی تنظیمیں احتجاجی مظاہرے بھی کر رہی ہیں

جی ٹوئنٹی سمٹ کے دوران ہیمبرگ میں اقتصادی عالمگیریت کے مخالفین سمیت بہت سی سماجی تنظیمیں احتجاجی مظاہرے بھی کر رہی ہیں۔ جرمن پولیس کے مطابق جمعرات کی شام قریب ایک ہزار انتہائی بائیں بازو کے شدت پسندوں اور پولیس کے درمیان جھڑپیں ہوئیں۔ پولیس کے ایک ترجمان کے مطابق ان جھڑپوں کے نتیجے میں 76 پولیس اہلکار زخمی ہوئے۔ جبکہ زخمی مظاہرین کی تعداد کا نہیں بتایا گیا۔

توقع کی جارہی ہے کہ ایک لاکھ کے قریب مظاہرین ہیمبرگ میں ہونے والے دو روزہ جی ٹونٹی سربراہی اجلاس کے دوران مظاہروں میں شرکت کریں گے۔ اس موقع پر ہیمبرگ شہر میں قریب 20 ہزار پولیس اہلکار، بکتر بند گاڑیاں، ہیلی کاپٹروں اور نگرانی کرنے والے ڈرونز شہر میں تعینات ہیں۔

Deutschland G20 Proteste in Hamburg (Reuters/F. Bimmer)

توقع کی جارہی ہے کہ ایک لاکھ کے قریب مظاہرین ہیمبرگ میں ہونے والے دو روزہ جی ٹونٹی سربراہی اجلاس کے دوران مظاہروں میں شرکت کریں گے

آج جمعہ سات جولائی سے شروع ہونے والے جی ٹونٹی سربراہی اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ، روسی صدر ولادیمیر پوٹن، چینی صدر شی جِن پنگ بھی شریک ہو رہے ہیں۔ توقع کی جا رہی ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کو اپنی ماحولیاتی پالیسی کے باعث اس اجلاس میں تنہائی کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔ ٹرمپ نے گزشتہ ماہ ہی امریکا کے تحفظ ماحول کے عالمی معاہدے سے نکل جانے کا اعلان کیا تھا۔

ملتے جلتے مندرجات