1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

فن و ثقافت

جیکسن کیس: پولیس کا ڈاکٹر سے انٹرویو

لاس اینجلیس ٹائمز کے مطابق پولیس نے مائیکل جیکسن کے نجی ڈاکٹر کا ایک اور انٹرویو کیا ہے جس کی روشنی میں یہ ثابت ہوتا ہے کہ ڈاکٹر کونریڈ مرے کا جیکسن کی موت میں کوئی ہاتھ نہیں ہے۔

default

مائیکل جیکسن جمعرات کے روز حرکتِ قلب بند ہوجانے کے باعث انتقال کرگئے تھے

Jermaine Jackson

مائیکل جیکسن کے بھائی جیرمین جیکسن


عالمی شہرت یافتہ پاپ اسٹار مائیکل جیکسن کے نجی ڈاکٹر کے وکیل کے مطابق اتوار کے روز لاس اینجلیس پولیس نے ڈاکٹر مرے کا ایک تفصیلی انٹرویو کیا جو تین گھنٹے تک جاری رہا۔ وکیل کے مطابق ڈاکٹر مرے جب جیکسن کے کمرے میں پہنچے تو وہ بے ہوش تھے اور سانس نہیں لے رہے تھے۔ وکیل کے مطابق اس وقت جیکسن کی نبض سست رفتار سے چل رہی تھی۔

ڈاکٹر کونریڈ مرے کے وکیل نے اس بات کی بھی تردید کی کہ انتقال سے قبل ڈاکٹر مرے نے جیکسن کو تکلیف دور کرنے کے لیے کوئی ’پین کلر‘ انجیکشن دیا تھا۔

واضح رہے کہ اس سے قبل ذرائع ابلاغ میں یہ خبر گردش کرتی رہی تھی کہ جمعرات کے روز مائیکل جیکسن کے انتقال سے ایک گھنٹہ قبل ان کے نجی معالج نے ان کو ’ڈیمیرول‘ نامی پین کلر انجیکشن دیا تھا۔ مائیکل جیکسن کے اہلِ خانہ نے بھی جیکسن کی موت میں ڈاکٹر مرے کے کردار کے حوالے سے سوالات اٹھائے تھے۔

Obama

امریکی صدر باراک اوباما نے جیکسن کے خاندان کے نام ایک تعزیتی پیغام تحریر کیا ہے

دوسری جانب یہ اطلاعات بھی ہیں کہ مائیکل جیکسن کے خاندان والوں کے مطالبے پر جیکسن کی لاش کا ایک اور پوسٹ مارٹم کروالیا گیا ہے۔ تاہم جیکسن کی تدفین کے حوالے سے ان کے خاندان والے ابھی تک کسی حتمی تاریخ کا تعین نہیں کرسکیں ہیں۔

دوسری جانب وائٹ ہاؤس کے ایک سینیئر اہلکار کے مطابق امریکی صدر باراک اوباما نے مائیکل جیکسن کے اہلِ خانہ کے نام ایک تفصیلی تعزیتی پیغام لکھا ہے۔ قبل ازیں باراک اوباما نے مائیکل جیکسن کو ایک غیر معمولی فن کار قرار دیتے ہوئے کہا تھا کہ آنجہانی گلوکار کی زندگی کئی اعتبار سے دردناک تھی۔

عالمگیر شہرت کے حامل پاپ اسٹار مائیکل جیکسن جمعرات کے روز حرکتِ قلب بند ہوجانے کے باعث انتقال کرگئے تھے۔ انیس سو بیاسی میں ’تھرلر‘ نامی البم نے ان کو شہرت کے اس مقام تک پہنچا دیا جس کی نظیر ڈھونڈنا اب تک مشکل ہے۔ ’تھرلر‘ آج کی تاریخ تک دنیا بھر میں سب سے زیادہ فروخت ہونے والا البم ہے۔ ان کی موت نے دنیا بھر میں ان کے مدّاحوں کو سوگوار کردیا ہے۔

DW.COM