1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

کھیل

جنوبی کوریا ایشیاکپ کے فائنل کے لیے پُرامید

فٹبال ایشیا کپ کے سیمی فائنلز آج 25 جنوری کو ہو رہے ہیں۔ جاپان کے خلاف میدان میں اترنے والی جنوبی کوریا کی نوجوان ٹیم کو یقین ہے کہ وہ 1988ء کے بعد پہلی مرتبہ فائنل میں پہنچ جائے گی۔

default

مشرقی ایشیا میں فٹبال کا مضبوط گڑھ سمجھے جانے والے ملک جنوبی کوریا کی ٹیم گزشتہ برس کھیلے جانے والے عالمی کپ کی ٹاپ 16 ٹیموں کے مرحلے تک رسائی حاصل کرنے میں کامیاب ہوگئی تھی۔ زیادہ تر نوجوان کھلاڑیوں پر مشتمل اس ٹیم کو یقین ہے کہ وہ 51 برس بعد ایشیا کے اس سب سے بڑے فٹبال ٹورنامنٹ میں کامیاب ہوجائے گی۔

جنوبی کوریائی ٹیم متاثر کن فارم میں ہے۔ گروپ سی میں آسٹریلیا کے بعد یہ دوسرے نمبر پر رہی جبکہ اس گروپ میں اس ٹیم نے بحرین اور بھارت کوباآسانی پچھاڑ دیا۔ تاہم مضبوط حریف ایران نے اس ٹیم کو ناکوں چنے چبوا دیے۔ ہفتہ کو کھیلے جانے والے کوارٹرفائنل کے فاضل وقت میں یہ ٹیم بمشکل ایک گول کرکے کامیاب ہوئی۔

جرمن فٹبال کوچ یوآخم لوو کی طرح جنوبی کوریا کے کوچ چوکوانگ رائے بھی جیت کے فارمولے کے طور پر نوجوان ٹیم پر ہی انحصار کررہے ہیں۔ جنوبی کوریا کی طرف سے اس ٹورنامنٹ میں اب تک گول کرنے والے کھلاڑیوں کی اوسط عمر 19.5 برس ہے۔

Fussball Asia Cup 2011 Bahrain Indien

ایشیا کپ کا فائنل 29 جنوری کو ہو گا

چو اس سے قبل کہہ چکے ہیں کہ کوریا کے سامنے دو اہم اہداف ہیں، پہلا ایشیا کپ میں فتح اور دوسرا ورلڈ کپ کے بعد زائد عمر کے کھلاڑیوں کی جگہ نوجوان کھلاڑی لانا۔ جنوبی کوریا کے کوچ کے مطابق ان مقاصد کے فوری اور لانگ ٹرم حصول کے لیے وہ کھیل کے اسٹائل میں تبدیلی کے خواہاں ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ اگر نوجوان کھلاڑیوں کی تربیت کے لیے مناسب وقت ہوگا تو مستقبل شاندار ہوگا۔

قطر میں جاری ایشیا کپ کا دوسرا سیمی فائنل آسٹریلیا اور ازبکستان کے درمیان 25 جنوری کو ہی کھیلا جائے گا۔ دونوں سیمی فائنلز کی فاتح ٹیموں کے درمیان فائنل 29 جنوری کو شیڈول ہے۔

رپورٹ: افسراعوان

ادارت: ندیم گِل

DW.COM

ویب لنکس