1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

جمیکا میں طاقتور اسمگلر کی تلاش، 60 افراد ہلاک

بحیرہ کیربین کے ملک جمیکا کے دارالحکومت کنگسٹن میں ایک بااثر اور طاقتور اسمگلر کرسٹوفر ’ڈوڈس‘ کوک کی تلاش کے باعث حکومتی سیکیورٹی فورسز اور ’ڈوڈس‘ کے حامیوں کے درمیان باقاعدہ جنگ کی کیفیت پائی جاتی ہے۔

default

اسمگلر ڈوڈس کے حامیوں کا جلوس

بحیرہ کیربین کی ریاست جمیکا کا دارالحکومت کنگسٹن باقاعدہ طور پر ایک کرائم سٹی کی شہرت رکھتا ہے۔ کنگسٹن کو بیرونی دنیا میں ’قتل کے واقعات کا دارالحکوت‘ بھی کہا جاتا ہے۔

کرسٹرفر ڈوڈس کوک کی ابھی تک جاری تلاش کے نتیجے میں حکومتی دستوں اور اس اسمگلر کے مسلح کارندوں کے درمیان خونریز جھڑپوں میں طبی ذرائع کے بقول اب تک ساٹھ سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں۔ پولیس کے مطابق ہلاک شدگان کی تعداد 27 ہے۔ ان کے علاوہ بے شمار افراد زخمی ہیں۔

طاقتور ’ڈرگ لارڈ‘ کرسٹوفر ڈوڈس منشیات کی سمگلنگ کے الزامات کے تحت امریکہ کو مطوب ہے۔ جمیکا کے وزیر اعظم بروس گولڈنگ نے ابھی حال ہی میں باقاعدہ اعلان کر دیا تھا کہ ڈوڈس کو حراست میں لے کر امریکہ کے حوالے کر دیا جائے گا۔ اس سلسلے میں امریکہ حوالگی کی دستاویز پر گزشتہ ہفتے کے دوران دستخط کر دئے گئے تھے۔ جمیکا کی پولیس کرسٹوفر ڈوڈس کی تلاش میں چھاپوں پر چھاپے مارتی چلی جا رہی ہے۔

ڈوڈوس کی تلاش کے سلسلے میں جمیکا کی پولیس نے کنگسٹن شہر کے غریب آبادی والے علاقے ٹیوولی گارڈن میں کئی بار چھاپے مارے ہیں۔ ٹیوولی گارڈن کے علاوہ دوسرے ایسے علاقے گن بیٹل کی وجہ سے جنگ کی صورت حال پیش کر رہے ہیں۔ مسلسل گولیاں چلنے کی آوازوں نے خوف و ہراس کی قضا قائم کر رکھی ہے۔

طبی ذرائع کے مطابق زخمیوں اور لاشوں سے لدے تین ٹرک شہر کے مختلف ہسپتالوں میں پہنچائے گئے ہیں۔ ان میں نوزائیدہ بچوں کی لاشیں بھی شامل ہیں۔ ان معصوم شہریوں کی ہلاکت پر حکومت کی جانب سے تاسف کا اظہار کیا گیا ہے۔

Jamaika West Kingston

سیکیورٹی دستوں کی آرمرڈ گاڑی کی زد میں آنے والی موٹر کار

جمیکا میں قومی سلامتی کے وزیر ڈوائٹ نیلسن نے کوک کی گرفتاری سے آخری خبریں آنے تک معذوری ظاہر کی ہے۔ یہ امر اہم ہے کہ کنگسٹن کی غریب اور پسماندہ آبادیوں میں کرسٹوفر کوک کو ایک ہیرو اور ان داتا کا درجہ حاصل ہے۔ بین الاقوامی اسمگلر کوک خود بھی اپنے آپ کو ایک تاجر قرار دیتا ہے۔ ایک پراسراریت کوک کی شخصیت کے گرد گھومتی ہے۔

بیالیس سالہ مائیکل کرسٹوفر کوک منشیات کی دنیا میں ’ڈُوڈس‘ کے نام سے مشہور ہے۔ وہ دنیا کے انتہائی مطلوب جرائم پیشہ افراد میں شمار کیا جاتا ہے۔ ڈوڈس انتہائی سفاک انسان سمجھا جاتا ہے، جو اپنے مخالفین کے ساتھ کسی بھی قسم کے رحم کے برتاؤ کو منشیات کی سمگلنگ کے قواعد کے منافی خیال کرتا ہے۔ وہ منشیات کی سمگلنگ کے علاوہ منظم جرائم اور اسلحے کی غیر قانونی ترسیل میں بھی ملوث ہے۔

ڈوڈس کے جرائم پیشہ گروپ کا نام ’شاور پوسے‘ ہے جو جمیکا کے دارالحکومت کنگسٹن کے علاوہ امریکی شہر نیویارک میں بھی فعال ہے۔ ڈوڈس کا باپ لیسٹر لائیڈ کوک بھی ایک بدنامِ زمانہ ڈرگ اسمگلر تھا۔ ڈوڈس کے جمیکا میں حکمران سیاسی جماعت جمیکا لیبر پارٹی کے ساتھ گہرے مراسم بتائے جاتے ہیں۔

رپورٹ: عابد حسین

ادارت: مقبول ملک