1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جسونت سنگھ کی کتاب پر بھارتی ریاست گجرات میں پابندی

جہاں ایک طرف تفریحی مقام شملہ میں بھارتیہ جنتا پارٹی کی ’’چنتک بیٹھک‘‘ جاری ہے وہیں دوسری طرف اسی شہر میں پارٹی کی بنیادی رکنیت سے خارج کئے جانے والے سینئر رہنما جسونت سنگھ کی متنازعہ کتاب خوب بک رہی ہے۔

default

جسونت سنگھ کی کتاب پر بھارتی ریاست گجرات میں پابندی عائد کر دی گئی ہے

بھارتی ریاست گجرات میں تو جسونت سنگھ کی کتاب " Jinnah- India Partition, Indipendence" کی فروخت پر پابندی عائد کردی گئی ہے۔ بھارتیہ جنتا پارٹی نے کتاب میں موجود مواد کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے اپنی ویب سائٹ پر لکھا ہے کہ تقسیم ہند میں بانیء پاکستان محمد علی جناح نے انتہائی اہم کردار ادا کیا تھا۔ بی جے پی نے جسونت سنگھ کی اس کتاب سے مکمل طور پر لاتعلقی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ کسی بھی لیڈر یا رکن کو پارٹی کے بنیادی نظریات کے خلاف لکھنے، بات کہنے یا کام کرنے کی اجازت نہیں دی جاسکتی ہے۔

Ali Jinnah Pakistan

جسونت سنگھ نے اپنی کتاب میں بانیء پاکستان کو عظیم شخصیت قرار دیا تھا

سابق وزیر خارجہ اور خزانہ جسونت سنگھ نے اپنی کتاب میں جناح کو نہ صرف ایک عظیم شخصیت قرار دیا ہے بلکہ تقسیم ہند کے لئے جواہر لال نہرو اورسردار ولَبھ بھئی پٹیل کو ذمہ دار ٹھہرایا۔

بھارتی میڈیا کا دعویٰ ہے کہ بی جے پی ’’چنتک بیٹھک‘‘ کے دوسرے روز عوام میں پارٹی کی مقبولیت میں کمی کے اسباب کا جائزہ لے رہی ہے۔ اگرچہ ارن جیٹلی کا کہنا ہے کہ اس میں کوئی حقیقت نہیں ہے تاہم بھارتی میڈیا کے مطابق عام انتخابات میں پارٹی کی ناکامی کی سب سے بڑی وجہ گجرات کے وزیر اعلیٰ نریندر مودی کو وزیر اعظم کے لئے نامزد کرنے کے نعروں کے علاوہ بھی بہت ایسے نعرے تھے جو لوگوں کی توجہ حاصل کرنے میں ناکام رہے۔ اس علاوہ پارٹی میں نوجوان قیادت کا فقدان اور وزیر اعظم من موہن سنگھ کی ذات پر حملے بھی بھارتیہ جنتا پارٹی کے لئے سود مند ثابت نہیں ہوئے۔

رپورٹ : میرا جمال

ادارت : گوہر نذیر

ملتے جلتے مندرجات