1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جرمن کمپنی مرسیڈیز کو نو بلین یورو منافع، ورکرز کے لیے بونس

جرمنی کی مشہور زمانہ مرسیڈیز گاڑیاں بنانے والی کمپنی ڈائملر کو گزشتہ برس اکتالیس بلین یورو آمدنی ہوئی، جس میں سے منافع قریب نو بلین یورو رہا۔ یہ کمپنی اس منافع میں سے ہر کارکن کو قریب پانچ ہزار یورو بونس بھی ادا کرے گی۔

جرمنی کے مالیاتی مرکز فرینکفرٹ سے جمعرات دو فروری کو موصولہ نیوز ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کی رپورٹوں کے مطابق مرسیڈیز گاڑیاں بنانے والی کمپنی ڈائملر کی طرف سے کہا گیا ہے کہ اس ادارے نے اپنے سب سے کامیاب برانڈ مرسیڈیز، جسے مرسیڈیز بینز بھی کہا جاتا ہے، کی طرف سے ایس یو وی (SUV) طرز کی جو نئی گاڑیاں کچھ عرصہ قبل متعارف کرائی تھیں، ان کی فروخت میں 2016ء میں زبردست اضافہ دیکھا گیا۔

گزشتہ برس کی آخری سہ ماہی میں تو اتنی زیادہ مرسیڈیز گاڑیاں فروخت ہوئیں کہ اکتوبر سے لے کر دسمبر تک کمپنی کے خالص منافع میں 18 فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔ اس وجہ سے گزشتہ برس کی چوتھی سہ ماہی میں ڈائملر گروپ کا منافع مزید بڑھ کر 2.2 بلین یورو ہو گیا، جو اس سے ایک سال قبل 2015ء کی آخری سہ ماہی میں 1.9 بلین یورو رہا تھا۔

مرسیڈیز گروپ کے تازہ ترین سالانہ کاروباری اعداد و شمار کے مطابق مرسیڈیز بینز گاڑیوں کی بہت زیادہ فروخت کی وجہ سے اس صنعتی گروپ کو مرسیڈیز ٹرکوں کی پیداوار اور فروخت کے شعبے میں ہونے والا نقصان پورا کرنے کا موقع بھی مل گیا۔

Pariser Autosalon 2016 Mercedes (Daimler AG)

سپورٹس ماڈل کی ایک نئی مرسیڈیز گاڑی

Mercedes Benz GLE 350 d Coupé 4MATIC (Daimler AG)

مرسیڈیز کمپنی کی نئی ایس یو وی گاڑیوں میں سے ایک ماڈل

پچھلے برس ترکی اور مشرق وسطیٰ کے خطے میں مرسیڈیز ٹرکوں کی فروخت میں کمی ہوئی لیکن ساتھ ہی مرسیڈیز لگژری کاروں کی فروخت سے ہونے والی آمدنی 53 فیصد اضافے کے ساتھ 2.56 بلین یورو تک پہنچ گئی۔

مجموعی طور پر مرسیڈیز گروپ کی 2016ء میں آمدنی 2015ء کی نسبت ایک فیصد اضافے کے ساتھ 41 بلین یورو ہو گئی جب کہ اس دوران خالص سالانہ منافع بھی بڑھ کر 8.7 بلین یورو ہو گیا۔

ڈائملر کمپنی نے اعلان کیا ہے کہ اربوں یورو کے اس سالانہ منافع کو وہ جرمنی میں اپنے قریب ایک لاکھ تیس ہزار کارکنوں میں ’پرافٹ شیئرنگ بونس‘ کے طور پر تقسیم کرنے کا ارادہ بھی رکھتی ہے۔ اس مد میں کمپنی کے ہر کارکن کو قریب پانچ ہزار یورو یا 5400 امریکی ڈالر کے برابر سالانہ بونس بھی دیا جائے گا۔ یہ بونس ان کارکنوں کو اس سال اپریل کی ماہانہ تنخواہ کے ساتھ ادا کیا جائے گا۔

DW.COM