جرمن چانسلر انگيلا ميرکل کی مقبوليت ميں کمی | حالات حاضرہ | DW | 27.12.2017
  1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جرمن چانسلر انگيلا ميرکل کی مقبوليت ميں کمی

جرمن شہريوں کی تقريباً نصف تعداد کا ماننا ہے کہ سن 2021 ميں ہونے والے آئندہ عام انتخابات سے قبل چانسلر انگيلا ميرکل کو اپنا عہدہ چھوڑ دينا چاہيے۔

جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کی جانب سے کرائے گئے رائے عامہ کے ايک تازہ جائزے کے مطابق تقريباً آدھے جرمن شہری سن 2021 ميں ہونے والے اگلے اليکشن سے قبل چانسلر انگيلا ميرکل کو اپنا عہدہ چھوڑتے ہوئے ديکھنا چاہتے ہيں۔ ’YouGov‘ نامی اس سروے کے نتائج بدھ ستائيس دسمبر کو جاری کيے گئے۔ مطالعے ميں شامل سينتاليس فيصد جرمن شہريوں نے کہا کہ وہ انگيلا ميرکل کو چانسلرشپ کے عہدے کی مدت کے خاتمے سے قبل سبکدوش ہوتے ہوئے ديکھنا چاہتے ہيں۔ جبکہ صرف چھتيس فيصد نے يہ رائے دی کہ ميرکل کو چانسلرشپ کی آئندہ مدت کے خاتمے تک اپنے عہدے پر فائض رہنا چاہيے۔

يہ امر اہم ہے کہ رواں برس اکتوبر ميں ہونے والے عام انتخابات کے فوری بعد کرائے گئے رائے عامہ کے جائزوں ميں ميرکل کی حمايت کافی بلند تھی۔ اس وقت اسی طرز کے ايک سروے ميں شامل چھتيس فيصد ملکی شہری سن 2021 ميں ہونے والے آئندہ عام انتخابات سے قبل چانسلر انگيلا ميرکل کو اپنا عہدہ چھوڑتے ہوئے ديکھنا چاہتے تھے جبکہ چواليس فيصد ان کے چانسلر کے منصب پر فائض رہنے کے حق ميں تھے۔

جرمنی ميں اکتوبر ميں ہونے والے اليکشن کے بعد ميرکل کی قدامت پسند جماعت کرسچن ڈيموکريٹک يونين، سوشل ڈيموکريٹس کے ساتھ مشروط حکومت کے قيام کے ليے بات چيت کا عمل جاری رکھے ہوئے ہے۔