1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جرمن وزیر اقتصادیات، روس روانہ ہو گئے

جرمن وزیر اقتصادیات اور نائب چانسلر زیگمار گابریئل دو روزہ دورے پر روس روانہ ہو گئے ہیں۔ اپنے اس دورے کے دوران وہ روسی حکام کے ساتھ شامی تنازعے کے علاوہ روس کے خلاف یورپی یونین کی پابندیوں کے معاملے پر بھی بات کریں گے۔

جرمن نائب چانسلر اور وزیر اقتصادیات زیگمار گابرئیل نے ماسکو روانہ ہونے سے قبل کہا کہ وہ روسی صدر ولادی میر پوٹن سے ملاقات کے دوران شام میں امدادی قافلے پر ہونے والے حملے کے موضوع پر بھی بات کریں گے۔ جرمن خبر رساں ادارے ڈی پی اے کے مطابق گابریئل کا کہنا تھا، ’’مشرقی یورپ، شام اور مشرق وُسطیٰ میں سیاسی اور اقتصادی استحکام ہمارے مفاد میں ہے۔‘‘

اپنے اس دورے کے دوران جرمن وزیر دونوں ممالک کے درمیان اقتصادی تعاون کو بڑھانے کے سلسلے میں آج بدھ 21 ستمبر اور جمعرات کے روز حکومتی نمائندوں سے بھی ملیں گے جبکہ روس میں موجود جرمن کاروباری اداروں کے اہلکاروں سے بھی ان کی ایک ملاقات طے ہے۔ اس دورے میں زیگمار گابریئل کے ساتھ اقتصادی ماہرین کا ایک وفد بھی ہے۔

زیگمار گابرئیل صدر ولادی میر پوٹن سے ملاقات کے دوران شام میں امدادی قافلے پر ہونے والے حملے کے موضوع پر بھی بات کریں گے

زیگمار گابرئیل صدر ولادی میر پوٹن سے ملاقات کے دوران شام میں امدادی قافلے پر ہونے والے حملے کے موضوع پر بھی بات کریں گے

خیال رہے کہ زیگمار گابریئل روس کے خلاف یورپی یونین کی پابندیوں کو برقرار رکھنے کے حوالے سے جرمن چانسلر انگیلا میرکل کو کئی مرتبہ تنقید کا نشانہ بنا چکے ہیں۔ روس کے خلاف یہ پابندیاں یوکرائنی علاقے کریمیا کو اپنے ساتھ ملانے اور پھر مشرقی یوکرائن میں علیحدگی پسندوں کی مدد کرنے کی وجہ سے دو برس قبل عائد کی گئی تھیں۔

جرمن وزیر اقتصادیات و نائب چانسلر زیگمار گابریئل کے دورہ ماسکو کو جرمنی کے ان کاروباری رہنماؤں کی طرف سے سراہا جا رہا ہے جو روس کے ساتھ بزنس پارٹنر شپ بحال کرنے کے متمنی ہیں۔