1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جرمن شہریت حاصل کرنے والے برطانوی باشندوں کی تعداد چار گنا

برطانوی عوام کے یورپی یونین سے اخراج کے فیصلے کے بعد جرمن شہریت ‌حاصل کرنے والے برطانوی باشندوں کی تعداد چار گنا ہو گئی ہے۔ برطانیہ بریگزٹ کا فیصلہ تو کر چکا ہے لیکن اس پر مکمل عمل درآمد میں ابھی چند برس لگیں گے۔

جرمن دارالحکومت برلن سے منگل تیرہ جون کو ملنے والی نیوز ایجنسی ایسوسی ایٹڈ پریس کی رپورٹوں کے مطابق جرمن حکام نے بتایا کہ گزشتہ برس جتنے غیر ملکیوں نے جرمن شہریت حاصل کی، ان میں برطانوی باشندوں کا تناسب مقابلتاﹰ کم رہا۔ لیکن ماضی کے مقابلے میں 2016ء میں جرمن شہریت اختیار کر لینے والے برطانوی باشندوں کی تعداد بڑھ کر 360 فیصد سے بھی زیادہ ہو گئی۔

جرمنی کے وفاقی دفتر شماریات نے بتایا کہ گزشتہ برس جون میں برطانیہ میں بریگزٹ نامی ریفرنڈم میں برطانوی ووٹروں نے اپنے ملک کے یورپی یونین سے اخراج کے حق میں جو فیصلہ کیا تھا، اس کے بعد اسی سال جرمنی میں مجموعی طور پر 2,865 برطانوی شہریوں نے مقامی شہریت حاصل کر لی۔

یہ تعداد 2015ء میں جرمن شہری بن جانے والے برطانوی شہریوں کی سالانہ تعداد کے مقابلے میں ساڑھے تین گنا سے بھی زیادہ تھی اور اس سے پہلے ایسا کبھی نہیں ہوا تھا کہ ہزاروں کی تعداد میں برطانوی شہریوں نے ایک سال کے اندر اندر جرمن شہریت اختیار کر لی ہو۔

سفاردی یہودی پانچ صدیوں بعد برطانیہ چھوڑنے لگے، وجہ حیران کن

سوئٹزرلینڈ میں غیر ملکیوں کے لیے شہریت کے حصول میں نرمی

دوہری شہریت یا برقعے سے خوف کیوں؟

جرمنی میں دہشت گردوں کی دوہری شہریت کی منسوخی کی تجویز

وفاقی دفتر شماریات کے مطابق مجموعی طور پر 2016ء میں قریب ایک لاکھ دس ہزار چار سو غیر ملکیوں نے جرمن شہریت حاصل کی۔ یہ مجموعی سالانہ تعداد اس سے ایک سال پہلے کے مقابلے میں 2.9 فیصد زیادہ تھی۔

ویڈیو دیکھیے 00:53

بنیادی جرمن قانون: ملکی شہریت

پچھلے برس کسی ایک قومیت کے حامل اور سب سے زیادہ تعداد میں جرمن شہریت حاصل کرنے والے غیر ملکیوں کا تعلق ترکی سے تھا۔ ان کی تعداد 16,290 رہی، جو 2015ء کے مقابلے میں 17.3 فیصد کم تھی۔ دوسرے نمبر پرپولینڈ کے شہری رہے، جن میں سے 6,632 نے پچھلے سال جرمن شہریت حاصل کی۔

جرمنی میں مروجہ قوانین کے مطابق آٹھ سال تک ملک میں قانونی قیام کرنے والا کوئی بھی غیر ملکی جرمن شہریت کی درخواست دے سکتا ہے جبکہ یورپی یونین کے رکن دیگر ملکوں اور سوئٹزرلینڈ کے شہری جرمن شہریت کے ساتھ ساتھ اپنے آبائی وطن کی شہریت بھی اپنے پاس رکھ سکتے ہیں۔

اگر کوئی غیر ملکی یورپی یونین سے باہر کے کسی ملک کا شہری ہو، تو اصولی طور پر جرمن شہریت کے حصول کے لیے اسے اپنے آبائی ملک کی شہریت ترک کرنا پڑتی ہے کیونکہ جرمنی میں بنیادی طور پر دوہری شہریت کی اجازت نہیں ہے۔

DW.COM

Audios and videos on the topic

ملتے جلتے مندرجات