1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

جرمنی، یورو زون سے تربیت یافتہ ورکرز کی تلاش میں

وفاقی جرمن ایجنسی برائے ملازمین نے پیر کے روز اپنے ایک بیان میں کہا ہے کہ جرمنی اپنے ہاں تربیت یافتہ ورکرز کی کمی پوری کرنے کے لیے یورو زون ممالک سے بڑی تعداد میں ہنرمند افراد بُلا رہا ہے۔

default

ایک جرمن صنعتی گروپ کے مطابق جرمنی کی تیزی سے نمو پزیر معیشت اور کم شرح بے روزگاری کی وجہ سے یہاں 36 ہزار انجینیئروں اور پانچ ہزار میڈیکل ڈاکٹرز کی ضرورت ہے، جس کے لیے مالیاتی بحران کے شکار یورپی ممالک سے ہنرمند افراد کو جرمنی بلایا جا رہا ہے۔

وفاقی جرمن ایجنسی برائے ملازمین کی ترجمان بیاٹے رابے کے مطابق ایجنسی کا خارجی اور پیشہ ورانہ امور سے متعلق ڈیپارٹمنٹ اس مقصد کے لیے یونان اور اسپین کے باہنر افراد کو زیادہ مواقع فراہم کر رہا ہے۔

’’ہم اسپین میں زیادہ دلچسپی رکھتے ہیں۔ وہاں بے روزگاری کی شرح خاصی بلند ہے۔ ہم چاہتے ہیں کہ وہاں کے شہریوں کو جرمنی میں کام کا موقع فراہم کیا جائے۔‘‘

Zahnarzt Praxisgebühr

جرمنی میں میڈیکل ڈاکٹرز کی بھی ضرورت ہے

ایک حالیہ رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ یورپی یونین میں شامل تمام ممالک کے مقابلے میں اسپین میں شرح بے روزگاری سب سے بلند ہے۔ اسپین میں ہر پانچ میں سے ایک فرد بے روزگار ہے۔

رابےکے مطابق یونان سے بھی ایسے ڈاکٹروں کو جرمنی بلایا جا رہا ہے، جو وہاں کئی برسوں سے پیشہ ورانہ امور کی انجام دہی میں مصروف رہے ہوں۔

جرمنی میں انتہائی کم شرح پیدائش اور بزرگ افراد کی تعداد میں اضافے کی وجہ سے یہاں ہنر مند افراد کی ضرورت میں اضافہ دیکھا جا رہا ہے۔ گزشتہ ماہ جرمنی نے ہنر مند افراد کے لئے اپنے امیگریشن قواعد میں خاصی نرمی کا اعلان کیا تھا۔ تاہم جرمنی میں ملازمت کے حوالے سے صرف قوانین ہی کا مسئلہ نہیں بلکہ بہت سے یورپی شہریوں کے مطابق جرمنی منتقل ہونے میں ایک اہم رکاوٹ مشکل جرمن زبان بھی ہے۔

ایجنسی کے مطابق دیگر یورپی ممالک میں جرمن زبان کو پہلی ترجیحی غیر ملکی زبان کے طور پر نہیں سیکھا جاتا، یہی وجہ ہے کہ یورپی شہریوں کو جرمنی میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

رپورٹ : عاطف توقیر

ادارت : امجد علی

DW.COM