1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

معاشرہ

’جرمنی میں گدھے کے خلاف عدالتی فیصلہ‘

جرمن عدالت نے ایک گدھے کے مالک کو کہا ہے کہ وہ اس جانور کی طرف سے ایک لگژری اسپورٹس کار کو پہنچائے گئے نقصان کا ازالہ کرے۔ گدھے نے اس گاڑی کے پچھلے حصے کو دو بار دانتوں سے کاٹا تھا، جس کے باعث گاڑی کا رنگ اتر گیا تھا۔

Hessen Prozess - Esel beißt in Sportwagen (picture alliance/dpa/Hit Radio FFH)

یہ ہے وہ گدھا جس نے لگژری اسپورٹس کار کو مبینہ طور پر ایک بڑی گاجر سمجھ لیا

خبر رساں ادارے ڈی پی اے نے جرمن شہر شلیٹس کی ایک مقامی عدالت کے حوالے سے بتایا ہے کہ جج قائل ہو گئے کہ اس گدھے نے دو بار اپنے تیز دانتوں سے گاڑی کے پچھلے حصہ کو کاٹا تھا، جس کے باعث اس قیمتی گاڑی کا رنگ خراب ہو گیا تھا۔ جمعرات کے دن عدالتی ترجمان نے کہا کہ اس گدھے کے مالک سے کہا گیا ہے کہ وہ اس نقصان کا ازالہ کرے۔

اس واقعے میں گاڑی کو پہنچنے والے نقصان کی مرمت پر تقریبا اٹھاون سو یورو کا خرچہ آیا تھا، جس میں سے نصف گاڑی کے مالک نے اپنی جیب سے ادا کیا تھا۔ اس گدھے کی انشورنس کمپنی نے صرف نصف رقم ہی ادا کی تھی۔

تاہم وہ اس کیس کو عدالت میں لے گئے تھے۔ اس اسپورٹس گاڑی کے پچاس سالہ مالک جب عدالت میں پہنچے تو ماحول کافی خوشگوار تھا۔ نہ تو عدالت میں ’مجرم گدھا‘ موجود تھا اور نہ ہی اس کا مالک۔

مقامی میڈیا کے مطابق فیٹوس نامی اس گدھے کا مالک اب بدل چکا ہے۔ عدالت میں گاڑی کے مالک سے پوچھا گیا کہ آیا انہیں معلوم تھا کہ جس علاقے میں یہ واقعہ رونما ہوا، وہاں گدھے موجود ہیں؟ اور یہ کہ آیا واقعی گاڑی کو ہونے والا نقصان گدھے کے کاٹنے کے باعث ہی ہوا۔ ایک عینی شاہد کی گواہی اور دیگر عدالتی لوازمات کے بعد عدالت نے فیصلہ سنایا کہ گاڑی کو گدھے نے ہی نقصان پہنچایا تھا۔

یوں عدالت نے گدھے کو قصووار قرار دیتے ہوئے اس کے مالک کو کہا کہ وہ نقصان کا ازالہ کرے۔ تاہم اس فیصلے پر عملدرآمد لازمی نہیں ہو گا۔ گزشتہ برس جب یہ کیس منظر عام پر آیا تھا تو غالبا اس گدھے نے مالٹے رنگ کی اس لگژری اسپورٹس کار کو ایک بڑی گاجر سمجھ لیا ہو گا۔

DW.COM

Audios and videos on the topic

ملتے جلتے مندرجات