1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

مہاجرین کا بحران

جرمنی میں پناہ کے متلاشی افراد کے لیے تربیتی پروگرام

جرمنی نے شامی مہاجرین کے لیے سول انجنیئرنگ اور تعمیر نو کے مختلف تربیتی پروگرامز شروع کرنے کا اعلان کیا ہے۔ شامی بحران ختم ہونے کے بعد یہ افراد اپنے ملک کی تعمیر نو کے کاموں میں معاون ثابت ہوں سکیں۔

جرمن وفاقی لیبر ایجنسی کا اندازہ ہے کہ مہاجرین کی تربیت کے اس پروگرام سے پناہ کے متلاشی تیس فیصد افراد کی استعداد کاری کی جا سکے گی۔ انہیں سول انجنیئرنگ اور تعمیر نو کے مختلف کاموں کے بارے میں سکھایا جائے گا، جو مستقبل میں نہ صرف ان کی ہنرمندی میں اضافے کا باعث ہو گا بلکہ ساتھ ہی ایسے ماہر افراد واپس جا کر اپنے آبائی ملک کی ترقی میں بھی اہم کردار ادا کر سکیں گے۔

جرمن حکومت نے اس پائلٹ پراجیکٹ کا اعلان گزشتہ ہفتے ہی کیا تھا۔ اس پراجیکٹ کے تحت شامی مہاجرین کو تعمیر نو کے اہم اور ضروری ہنر سکھائے جائیں گے۔ یہ منصوبہ جرمن وزیر دفاع اُرزلا فان ڈیئر لاین اور وفاقی لیبر ایجنسی کے سربراہ فرانک ژورگن ویزے کی سربراہی میں شروع کیا گیا ہے۔

اس منصوبے کے تحت پناہ کے متلاشی ایک سو بیس افراد کو سول انجنیئرنگ، تعمیر نو اور نکاسی آب کے کام کے حوالے سے خصوصی تربیت دی جائے گی۔

وزیر دفاع اُرزلا فان ڈیئر لاین نے اس منصوبے کو اہم قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ جب شام میں خانہ جنگی ختم ہو گی تو اس ملک کو ہنر مند افراد کی ضرورت ہو گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر یہ مہاجرین واپس اپنے ملک نہیں بھی جاتے تو بھی یہ جرمن جاب مارکیٹ میں اہم ثابت ہو سکیں گے۔

بارہ ہفتے دورانیے کی اس تربیتی پروگرام میں ان مہاجرین کو جرمنی کے مختلف شہروں میں تربیت فراہم کی جائے گی۔ جرمن وزیر دفاع نے بتایا ہے کہ ابھی تک صرف 45 مہاجرین نے ہی اس پروگرام کے لیے خود کو رجسٹر کرایا ہے، جس میں ایک خاتون بھی شامل نہیں ہے۔ انہوں نے کہا کہ جلد ہی اس کورس کے لیے مطلوبہ یعنی ایک سو بیس امیدوار رجسٹر کر لیے جائیں گے۔

Deutschland Bundeswehr bildet Flüchtlinge aus Von der Leyen mit einem Flüchtling aus Syrien

خاتون جرمن وزیر دفاع اُرزلا فان ڈیئر لاین اس منصوبے کی کامیابی کے لیے پرامید ہیں

Deutschland Flüchtlinge in der zentralen Ausbildungseinrichtung für die Pioniertruppe der Bundeswehr

جرمن وزیر دفاع اُرزلا فان ڈیئر لاین اور وفاقی لیبر ایجنسی کے سربراہ فرانک ژورگن ویزے کی سربراہی میں شروع کیا گیا ہے

Deutschland Bundeswehr bildet Flüchtlinge aus Von der Leyen mit Frank-Jürgen Weise

اس پراجیکٹ کے تحت شامی مہاجرین کو تعمیر نو کے اہم اور ضروری ہنر سکھائے جائیں گے

اُرزلا فاں ڈیئر لاین کے بقول یہ ایک افسوس کی بات ہے کہ اس کورس کے لیے ابھی تک کم خاتون نے رجسٹریشن نہیں کرائی ہے، ’’ہم بالخصوص نوجوان خواتین کی تلاش میں ہیں۔‘‘ وفاقی لیبر ایجنسی کے سربراہ فرانک ژورگن ویزے بھی اس پروگرام سے بہت زیادہ پرامید ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ اس کورس سے جرمنی میں تیس تا چالیس فیصد مہاجرین فائدہ اٹھا سکتے ہیں۔

یہ امر اہم ہے کہ شام میں جاری خانہ جنگی کے باعث وہاں دو لاکھ پچاس ہزار سے زائد افراد ہلاک ہو چکے ہیں جبکہ ملک کی ایک بڑی آبادی مہاجرت پر مجبور ہو چکی ہے۔ ساتھ ہی اس ملک کے زیادہ تر حصے کھنڈر بن چکے ہیں، جہاں بنیادی شہر ڈھانچہ تباہ ہو کر رہ گیا ہے۔ ناقدین کا کہنا ہے کہ اس ملک میں جاری شورش کے خاتمے کے بعد اس ملک کو تعمیر نو ایک بڑا کام ثابت ہو گا۔