1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جرمنی: بحری کارگو ٹینکرحادثے کا شکار، عملے کے دو ارکان لاپتہ

جرمنی کے دریائے رائن میں تیزابی مادے سے لدا ایک کارگو ٹینکر الٹنے کے بعد وہاں بحری آمد ورفت کو عارضی طور پر روک دیا گیا ہے۔ ابھی تک واضح نہیں ہو سکا ہے کہ ٹینکر میں لدا گندھک کا تیزاب پانی میں شامل ہوا ہے یا نہیں۔

default

حادثے کا شکار ہونے والا کارگو ٹینکر

حکام نے بتایا ہے کہ یہ حادثہ جمعرات کی صبح پیش آیا۔ اس ٹینکر میں عملے کے کُل چار افراد سوار تھے، جن میں سے دو کو بچا لیا گیا ہے جبکہ دو ابھی تک لاپتہ ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ لاپتہ افراد کو تلاش کرنے کے لئے امدادی کام جاری ہے۔

امدادی کارروائیوں میں ہیلی کاپٹر بھی شامل ہیں۔ جرمن کارگو ٹینکر Ludwigshafen سے Belgian کی طرف گامزن تھا کہ ویزباڈن کے قریب اسے حادثہ پیش آیا۔ اس میں چوبیس سو ٹن گندھک کا تیزاب لدا ہوا تھا۔

جرمن حکام نے بتایا ہے کہ اس کارگو جہاز میں لدا ہوا گندھک کا تیزاب انتہائی محفوظ طریقے سے بند کیا گیا تھا، اور اس بات کے امکانات کم ہی ہیں کہ یہ دریا کے پانی میں شامل ہو گا۔

حادثے کا شکار ہونے والا سو میٹر لمبا ٹینکر اس وقت St. Goarshausen نامی ایک شہر کی دریائی حدود میں پھنسا ہوا ہے۔ یہ وہی دشوار گزار آبی راستہ ہے، جہاں حادثات رونما ہوتے رہتے ہیں۔

Flash-Galerie Gekenterter Tanker auf dem Rhein

امدادی ٹیمیں اس کارگو ٹینکر کو سیدھا کرنے کی کوشش کر رہے ہیں

حال ہی میں ہونے والی شدید برفباری کے نتیجے میں دریائے رائن میں طغیانی پائی جا رہی ہے۔ حکام اس بات کا جائزہ بھی لے رہے ہیں کہ آیا اس حادثے کی وجہ رائن میں سیلاب کا نتیجہ تو نہیں۔ تاہم حکام نے کہا ہے کہ وہ اس واقعہ کی مکمل تحقیقات کرنے کے بعد نتیجہ نکالیں گے کہ اس حادثے کی اصل وجہ کیا تھی۔

رپورٹ: عاطف بلوچ

ادارت: امتیاز احمد

DW.COM