1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

مہاجرین کا بحران

جرمنی: افغان پناہ گزین کے ہاتھوں ہم وطن کا قتل

جرمنی ميں پناہ گزينوں کی ايک عارضی رہائش گاہ ميں چاقو سے حملے کے ایک واقعے ميں ايک افغان مہاجر ہلاک ہو گيا ہے۔ حکام نے قتل کے شبے ميں اسی کيمپ میں مقیم ايک اور افغان تارک وطن کو حراست ميں لے ليا ہے۔

جرمن ذرائع ابلاغ کی رپورٹوں کے مطابق جنوب مغربی وفاقی رياست رائن لینڈ پلاٹينیٹ کے شہر ہَسلوخ کے ايک مہاجر کيمپ ميں ايک بائيس سالہ پناہ گزين کو ہلاک کر ديا گيا ہے اور پبلک براڈکاسٹر RNF کے مطابق قتل کے شبے ميں ايک چھبيس سالہ افغان مہاجر کو گرفتار کر ليا گيا ہے۔

سياسی پناہ کے ليے رواں برس اب تک ايک ملين سے زائد تارکين وطن جرمنی پہنچ چکے ہيں۔ اکثر اوقات ان کے کيپموں ميں گنجائش سے زيادہ مہاجرين ہوتے ہيں، جس کے نتیجے میں جھگڑے معمول کی بات ہيں۔ ایسے ہی ایک کيمپ ميں تشدد کا يہ تازہ ترين واقعہ پير چودہ دسمبر  کے روز پيش آيا۔

اطلاعات کے مطابق کسی نامعلوم وجہ سے شروع ہونے والی گرما گرم بحث اور پھر لڑائی کے دوران مبینہ قاتل نے مقتول کو کئی مرتبہ چاقو کے وار کر کے ہلاک کر ديا۔ چيف پراسيکيوٹر ہوبرٹ اشٹروئبر کے مطابق يہ واقعہ ايک چھوٹے مہاجر کيمپ ميں پيش آيا۔

قبل ازيں وسطی جرمن صوبے ہَيسے کے شہر کيلک ہائم ميں بھی پير ہی کے روز ايسے ہی ايک حملے ميں ايک اکيس سالہ مہاجر شديد زخمی ہو گيا تھا۔ نيوز ايجنسی ڈی پی اے کے مطابق يہ حملہ بھی چاقو سے کيا گيا اور پولیس ايک سولہ سالہ لڑکے کو حراست ميں لے چکی ہے۔

ملتے جلتے مندرجات