1. Inhalt
  2. Navigation
  3. Weitere Inhalte
  4. Metanavigation
  5. Suche
  6. Choose from 30 Languages

حالات حاضرہ

جارجیا کے القاعدہ سے تعلقات ہیں، روس کا الزام

روس نے جارجیا پر القاعدہ کے دہشت گردوں کی ٹریننگ کرنے اور انہیں قفقاز کے خطے کے روسی علاقوں میں منتقل کرنے کا الزام لگایا ہے، تاکہ وہ چیچنیا اور داغستان میں دہشت گردانہ کارروائیاں کرسکیں۔

default

ماسکو میں روسی حساس ادارے فیڈرل سیکیورٹی سروس یا ایف۔ایس۔پی کا ہیڈکوارٹرز

خبر رساں ادارے اے ایف پی نے اپنی ایک رپورٹ میں لکھا ہے کہ روسی حساس ادارے ایف۔ایس۔ بی کے سربراہ الیگزینڈر بورٹنی کوف کے مطابق قفقاز کے خطے سے گرفتار کئے گئے مقامی عسکریت پسندوں کے پاس سے ایسی آڈیو کیسٹس برآمد ہوئی ہیں، جن سے ثابت ہوتا ہے کہ ’’ان کا رابطہ القاعدہ کے ساتھ ساتھ جارجیا کے حساس اداروں سے بھی تھا‘‘۔ انہوں نے کہا کہ جارجیا کے حساس ادارے ان رابطوں کی مدد سے چیچنیا میں عسکریت پسندوں کی براہ راست مدد کرنے میں ملوث ہیں۔

Akhmad Kadyrov, Tschetschenien, Kaukasusrepublik, Porträt

چیچنیا کے روس نواز صدر احمد قدیروف، جن کی صدارت کے دوران چیچن باغیوں کی کارروائیوں میں شدید اضافہ دیکھنے میں آیا ہے

بورٹنی کوف نے تبلیسی حکام پر داغستان میں مقامی عسکریت پسندوں کو ہتھیاروں کی فراہمی کے ساتھ ساتھ ان کی ٹریننگ کرنے کا بھی الزام لگایا ہے۔ ’’تبلیسی انتظامیہ عسکریت پسندوں کی مالی معاونت کے ساتھ ساتھ ان کو ہتھیار اور دھماکہ خیز مواد بھی فراہم کررہی ہے، تاکہ وہ داغستان میں اہم مقامات، بشمول تیل اور گیس کی تنصیبات پر دہشتگرادنہ کارروائیاں کرسکیں۔‘‘

روس اور جارجیا کے درمیان تعلقات گزشتہ سال اگست میں چھ روزہ جنگ کےیعدسے مسلسل بگڑتے دکھائی دے رہے ہیں۔ اسی دوران روس کے زیر انتطام قفقاز کی ریاستوں میں مسلم عسکریت پسندوں کی کارروائیوں میں بھی تیزی سے اضافہ ہوا ہے۔

روس کا موقف رہا ہے کہ شمالی قفقاز کی ریاستوں میں جاری عسکریت پسندی کی لہر کے پیچھے ’’غیر ملکی عناصر‘‘ کا ہاتھ ہو سکتا ہے۔ روس نے بارہا جارجیا کے حکام پر چیچنیا کے عسکریت پسندوں کی مالی معاونت کرنے کا بھی الزام لگایا ہے۔

رپورٹ: انعام حسن

ادارت: عدنان اسحاق